Tuesday , October 17 2017
Home / ہندوستان / بریلی مسجد میں لاوڈ اسپیکر کے استعمال پر فساد

بریلی مسجد میں لاوڈ اسپیکر کے استعمال پر فساد

حفیظ گنج علاقہ میں اذاں پر ہندوؤں کا اعتراض ، مسلمانوں سے تصادم
بریلی ۔ 20 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : اترپردیش کے ٹاون بریلی میں جمعہ کی نماز کے لیے لاوڈ اسپیکر اذاں دئیے جانے پر اعتراض کرتے ہوئے ہندوؤں نے مسلمانوں کے ساتھ جھڑپ کی اور فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا ہوگئی ۔ مسجد میں اذاں کے لیے جب لاوڈ اسپیکر کا استعمال کیا گیا تو مقامی ہندوؤں نے اعتراض کیا ۔ ہندو طبقہ سے تعلق رکھنے والا ایک گروپ نے حفیظ گنج علاقہ میں واقع مسجد میں مسلمانوں سے بحث و تکرار کی ۔ اس کے بعد دونوں جانب سے سنگباری کی گئی اور صورتحال پرتشد ہوگئی ۔ ذرائع نے کہا کہ یہاں پر فائرنگ بھی کی گئی ۔ تشدد میں 20 افراد زخمی ہوئے ۔ پولیس نے ابتداء میں معمولی واقعہ سمجھ کر خاموشی اختیار کرلی تھی بعد ازاں تشدد بھڑکنے پر پولیس فورس کی بڑی تعداد روانہ کیا ۔ جس کے بعد صورتحال پر قابو پالیا گیا ۔ سپرنٹنڈنٹ پولیس ( رورل ) یمونا پرساد نے کہا کہ اس علاقہ میں کشیدگی برقرار ہے ۔ دونوں گروپ سے تعلق رکھنے والے تقریبا 300 افراد تشدد میں ملوث تھے ۔ تب پولیس کی زائد فورس وہاں پہونچی تو متصادم گروپس کے ارکان فرار ہوگئے ۔ اس کے بعد پڑوسی علاقوں سے جھڑپوں کی اطلاعات ملی ہیں اور یہ جھڑپیں شام تک جاری تھیں ۔ مقامی پولیس نے جو شاہ جہاں پور میں تھی اور وہ وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کے دورہ سے قبل سیکوریٹی انتظامات میں مصروف تھی لیکن یہاں فساد کو دیکھتے ہوئے زائد فورس کو طلب کرلیا گیا ۔ پولیس نے تصادم اور تشدد میں ملوث افراد کی نشاندہی کر کے گرفتاریاں شروع کی ہیں ۔ ذرائع نے بتایا کہ اس علاقہ میں گذشتہ ایک ہفتہ سے کشیدگی پائی جاتی ہے کیوں کہ ہندوؤں نے لاوڈ اسپیکر اذاں دینے کی مخالفت کی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT