Thursday , August 17 2017
Home / ہندوستان / بریڈ میں کینسر کا سبب بننے والے کیمیائی اجزاء

بریڈ میں کینسر کا سبب بننے والے کیمیائی اجزاء

مشہور برانڈ کی روٹی ، پاؤ ، پیزا اور برگر کے معائنوں کی مثبت رپورٹ
نئی دہلی ۔ 23 مئی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) دہلی میں مشہور برانڈس کی تقریباً تمام بریڈس (روٹی ) کے نمونوں میں کینسر کی وجہ بننے والے کمیکلس موجود ہونے کا پتہ چلا ہے ۔ جس کے ساتھ ہی مرکزی وزارت صحت نے معاملہ کی تحقیقات کا حکم دیا ہے ۔ سنٹر فار سائنس اینڈ انوائرمنٹ ( سی ایس ای ) کی رپورٹ میں بتایا گیاہے کہ پہلے سے پیاک کی گئی بریڈس بشمول پاؤ اور بن کے 38 دستیاب برانڈس کے منجملہ تقریباً 84 فیصد میں پوٹاشیم برومیٹ اور پوٹاشیم آیوڈیٹ کی موجودگی کا پتہ چلا ہے ۔ یہ دونوں کیمیائی اجزاء کئی ممالک میں ممنوعہ ہیں اور صحت عامہ کیلئے اسے مضرت رساں قرار دیا گیا ہے۔ رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ان میں کا ایک کیمیائی جُز 2B کیارکینوجن زمرے میں آتا ہے جبکہ دوسرا کیمیائی جُز تھائیرائیڈ کا سبب بنتا ہے لیکن ہندوستان میں اس کے استعمال پر امتناع عائد نہیں کیا گیا ہے ۔ جن بریڈ کے نمونوں کی جانچ کی گئی اُن میں برٹانیا، ہارویسٹ گولڈ شامل ہیں۔ اسی طرح فاسٹ فوڈ چین ، کے ایف سی ، پیزاہٹ ، ڈومینوس، سب وے ، میکڈونالڈس اور سلائس آف اٹلی میں سربراہ کئے جانے والے نمونوں کی رپورٹ بھی مشبت پائی گئی ۔ برٹانیا ، کے ایف سی ، ڈومنیوس ، میکڈونالڈس اور سب وے نے اُن کے پراڈکٹس میں ان کیمیکلس کے استعمال کی تردید کی۔ دیگر برانڈس نے متعدد کوششوں کے باوجود اس پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ۔ سی ایس ای رپورٹ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے وزیر صحت جے پی ندا نے کہا کہ ہم اس معاملے کا جائزہ لے رہے ہیں ۔ انھوں نے عہدیداروں کو ہنگامی بنیاد پر تمام تفصیلات اکٹھا کرنے کی ہدایت دی ۔ اس ضمن میں پریشان ہونے کی کوئی بات نہیں اور عنقریب تحقیقاتی رپورٹ سامنے لائی جائے گی ۔ سی ایس ای کی آلودگی پر نظر رکھنے والی لیباریٹری نے دہلی میں عام طورپر دستیاب برانڈیڈ اقسام کی پیاکیج شدہ بریڈس ، مشہور فاسٹ فوڈ آؤٹ لیٹس کی پاؤ اور بن ، تیار برگر بریڈ اور تیار پزا بریڈ کے 38 نمونوں کی جانچ کی ۔ اس دوران فوڈ سیفٹی سے متعلق ادارے نے پوٹاشیم برومیٹ کو غذائی اجزاء کی فہرست سے خارج کرنے کی سفارش کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT