Monday , October 23 2017
Home / Top Stories / بسنت پنچمی کے موقع پر بھوج شالہ میں پوجا اور نماز

بسنت پنچمی کے موقع پر بھوج شالہ میں پوجا اور نماز

دھار ( مدھیہ پردیش ) 12 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام) مدھیہ پردیش کے دھار میں متنازعہ بھوج شالہ کے مقام پر مسلمانوں نے بھی آج نماز جمعہ ادا کی اور یہ سب کچھ پرامن طور پر ہوا ۔ اندور کے ڈیویژن کمشنر سنجے دوبے نے بتایا کہ 25 تا 30  مسلمانوں کے گروپ نے یہاں دو پہر میں نماز پرامن طور پر ادا کی ۔ قبل ازیں دائیں بازو کی تنظیم نے یہاں پوجا کی تھی ۔ انہوں نے الزام عائد کیا تھا کہ اس مقام پر کچھ سکیوریٹی اہلکار جوتے پہنے ہوئے تھے ۔ تاہم بعد میں انہوں نے اس عمارت کے اندر بھی پوجا کی ۔ کمشنر نے بتایا کہ پوجا اور نماز کے دوران یہاں کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا ۔ انہوں نے بتایا کہ بسنت پنچمی تہوار کے موقع پر بھاری تعداد میں بھکتوں نے یہاں پوجا میں حصہ لیا ۔ حالات کو دیکھتے ہوئے حکام نے سارے علاقہ کو عملاً پولیس چھاؤنی میں تبدیل کردیا تھا اور بھاری پولیس جمعیت متعین کردی گئی تھی تاکہ کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہ آنے پائے انہوں نے کہا کہ جو حقیقی بھکت ہیں وہ اس عمارت کے باہر پوجا کر رہے ہیں ۔ بسنت پنچمی تہوار کے موقع پر یہاں کچھ دن سے کشیدگی پیدا ہوگئی تھی۔ مگر آج کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔ پرویز باری کی اطلاع کے بموجب مسلمانوں کو نماز جمعہ کی ادائیگی کیلئے عدالت نے مصلیوں کی تعداد مقرر نہیں کی تھی اور متنازعہ عمارت کے اندرونی حصہ میں نماز کی اجازت دی گئی تھی۔ تاہم آج اس کے برخلاف عمل ہوا جو تحقیر عدالت کے مترادف ہے۔ چنانچہ مقامی مسلمانوں نے اس اقدام کے خلاف عدالت سے دوبارہ رجوع ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT