Thursday , August 17 2017
Home / پاکستان / بعض عناصر ہندوپاک خوشگوار تعلقات کیخلاف : قصوری

بعض عناصر ہندوپاک خوشگوار تعلقات کیخلاف : قصوری

اسلام آباد ؍ ممبئی ۔ 12 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے سابق وزیرخارجہ خورشید محمود قصوری نے آج ممبئی میں شیوسینا ورکرس کے ذریعہ سدھیندرا کلکرنی کے چہرے پر سیاہی پھینکنے کے واقعہ کی شدید مذمت کی، جنہوں نے شیوسینا کی آمریت کے آگے سر تسلیم خم کرنے سے انکار کردیا تھا۔ مسٹر قصوری نے کہا کہ اس واقعہ سے انہیں مایوسی نہیں ہوئی کیونکہ دونوں ممالک (ہندوپاک) میں ایسے عناصر موجود ہیں جو یہ نہیں چاہتے کہ ہندوپاک کے درمیان خوشگوار تعلقات استوار ہوں۔ انہوں نے کہاکہ عوام کو احتجاج کرنے کا پورا حق ے لیکن کلکرنی کے ساتھ جو کچھ ہوا وہ احتجاج کے زمرے میں نہیں آتا۔ او آر ایف صدرنشین کلکرنی جو قصوری کی کتاب کی اجرائی کرنے والی تنظیم ہے، کے ساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عوام کی ذہنی فکر مثبت نوعیت کی ہونی چاہئے۔ یاد رہے کہ کلکرنی پر ان کی رہائش گاہ کے قریب شیوسینا ورکرس نے سیاہی پھینک دی تھی۔ انہوں نے کہا کہ وہ خود بھی ایک سیاست داں رہ چکے ہیں اور اس بات سے بخوبی واقف ہیں کہ سیاسی احتجاج کیا ہوتا ہے لیکن احتجاج کا مظاہرہ بھی پرامن طریقہ سے ہونا چاہئے۔ قصوری کی کتاب کی رسم اجرائی کی تقریب کو شیوسینا منعقد ہونے نہیں دینا چاہتی جس کا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے قصوری کارگل جنگ کے وقت وزیرخارجہ نہیں تھے۔

TOPPOPULARRECENT