Sunday , May 28 2017
Home / عرب دنیا / بغداد کی بارگاہ پر عقیدتمندوں کا ہجوم

بغداد کی بارگاہ پر عقیدتمندوں کا ہجوم

پورے عراق میں خودکش حملوں کے انسداد کیلئے سخت حفاظتی انتظامات

بغداد۔23اپریل (سیاست ڈاٹ کام) لاکھوں عقیدتمند بغداد میں امام  خادم کی بارگاہ پر جمع ہوگئے جب کہ ایک ہفتہ طویل تقاریب اپنے نقطہ عروج پر پہنچ گئیں ۔ بعض لوگوں نے عراق کے دارالحکومت میں لاکھوں افراد کے جمع ہونے کی اطلاع دی ہے ۔ اپنے سر اور سینے پیٹھ کر ماتم کرتے ہوئے ہزاروں افراد فرضی تابوت کو چھونے کی کوشش میں ایک دوسرے سے دھکم پیل کررہے تھے ۔ یہ فرضی تابوت شمالی مضافاتی علاقہ خادمیہ میں واقع درگاہ تک جلوس کی شکل میں منتقل کیا جاتا ہے ۔ عقیدتمندوں میں شامل ایک 28سالہ احمد جمال نے کہا کہ ان تقاریب میں شدت کا ہمارے لئے بہت کچھ مطلب ہوتا ہے ‘اس کا مقصد امام کے برداشت کئے ہوئے مصائب اور انہیں درپیش ناانصافیوں کا احترام ہے ۔ اس سے ہماری ان سے وابستگی کی تجدید ہوتی ہے ۔ امام خادم شیعہ مسلمانوں کے 12امام کے سلسلہ میں ساتویں امام تھے جن کا انتقال 799 ء میں ہوا تھا ۔ حالیہ برسوں میں ان کی یاد منانے کیلئے عراق کے دارالحکومت میں کثیر تعداد میں لوگ جمع ہوتے ہیں اور معمول کے کاروبار کئی دن تک جمود کا شکار ہوجاتے ہیں ۔ جاریہ سال منتظیمین کے اندازہ کے بموجب خادمیہ میں ایک کروڑ افراد آئے ہوئے ہیں ۔ اربعین کے موقع پر کربلا میں گذشتہ سال ایک کروڑ 70لاکھ افراد جمع ہوئے تھے ۔ شیعہ مذہبی تقاریب و بارگاہیں دولت اسلامیہ کے خودکش حملوں کا نشانہ بنی ہوئی ہیں ۔ اس لئے پورے بغداد میں سخت حفاظتی انتظامات کے تحت کئی فوجیوں کو تعینات کیا گیا ہے ۔ کئی عام راستے ٹریفک کیلئے کئی دن تک بند رہتے ہیں تاکہ کار بم حملوں کے اندیشوں کا انسداد کیا جاسکے اور زائرین کو درگاہ تک پہنچنے کا موقع مل سکے ۔ بعض افراد کئی ہفتے کے پیدل سفر کے ذریعہ بارگاہ تک پہنچتے ہیں

عراق پولیس اڈہ پر دولت اسلامیہ کا حملہ ‘ ایک ہلاک
اربیل۔23اپریل ( سیاست ڈاٹ کام) عراقی عہدیداروں نے کہا کہ دولت اسلامیہ کے عسکریت پسندوں نے قصبہ کے پولیس اڈے پر حملہ کیا اور کم از کم ایک ملازم پولیس ہلاک کردیا گیا ۔ پولیس کے ترجمان کیپٹن محمود عطیہ نے کہا کہ ہمام العلیل کے پولیس اڈے پر جو موصل کے جنوب میں ہے حملہ کیا گیا تھا ‘ مقام ٹی وی چینل کے رپورٹر نے کہا کہ دو خودکش حملہ آور اس اڈے میں دھماکو مادوں کے ساتھ زبردستی داخل ہوگئے تھے ۔ ایک پولیس عہدیدار نے کہا کہ ایک ملازم پولیس حملہ میں ہلاک ہوگیا ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT