Wednesday , October 18 2017
Home / شہر کی خبریں / بغیر محرم سفر حج کی اجازت شریعت میں مداخلت

بغیر محرم سفر حج کی اجازت شریعت میں مداخلت

مسلمانوں میں ناراضگی ، مولانا خلیل الرحمن سجاد نعمانی کی وضاحت
حیدرآباد ۔ 10 اکتوبر (سیاست نیوز) آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے بغیر محرم کے سفر حج کی اجازت سے متعلق مرکزی حکومت کی نئی پالیسی کو شریعت میں مداخلت قرار دیا اور کہا کہ بورڈ شریعت میں مداخلت کو ہرگز برداشت نہیں کرے گا۔ بورڈ کے ترجمان مولانا خلیل الرحمن سجاد نعمانی نے اس سلسلہ میں بورڈ کے موقف کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ہند نے نئی حج پالیسی میں کئی ایسے اہم اعلانات کئے ہیں جو مسلمانان ہند کے لئے ہرگز قابل قبول نہیں ہے ۔ حج کمیٹی کے خلاف ملک کے مسلمانوں میں شدید ناراضگی پائی جاتی ہے ۔ جامع مسجد دہلی کے شاہی امام سید احمد بخاری نے نئی حج پالیسی کے بارے میں آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ سے شرعی موقف کی وضاحت کا مطالبہ کیا تھا ۔ نئی حج پالیسی میں کہا گیا ہے کہ 45 سال سے زائد عمر کی خواتین بغیر محرم کے سفر حج کرسکتی ہیں۔ مولانا خلیل الرحمن سجاد نعمانی نے کہا کہ بورڈ کو یہ نئی حج پالیسی منظوری نہیں ہے ۔ شرعی لحاظ سے یہ غلط ہے ، جسے بورڈ کسی بھی صورت میں قبول نہیں کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ نئی حج پالیسی سے مسلمانوں میں سخت بے چینی پائی جاتی ہے جو یقیناً قابل توجہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس مسئلہ پر پرسنل لا بورڈ کے ذمہ دار بہت جلد اپنی حکمت عملی طئے کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT