Tuesday , October 24 2017
Home / Top Stories / : بــس پــہ چــرچـــا : برطانیہ میں ’’مودی ایکسپریس‘‘ بس لانچنگ

: بــس پــہ چــرچـــا : برطانیہ میں ’’مودی ایکسپریس‘‘ بس لانچنگ

اولمپک طرز کے استقبالیہ میں شرکت کیلئے رجسٹریشن اور دعوت ناموں کیلئے درخواستوں کا ادخال
ویمبلے اسٹیڈیم میں 13 نومبر کو وزیراعظم نریندر مودی کا زبردست استقبال متوقع

لندن ۔ 13 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) برطانیہ میں ہندوستانی برادری کے لوگوں نے یہاں کے ایسے مقامات کو جو تاریخی نوعیت کے حامل ہیں اور سیاحوں کیلئے کشش رکھتے ہیں، کی سیر کیلئے ایک ماہ طویل مدت تک چلنے والی ’’مودی ایکسپریس‘‘ بس کا افتتاح کیا۔ اتوار کو بس نے اپنے سفر کا آغاز کرتے ہوئے پہلا توقف ریلنگ روڈ، ویمبلے میں کیا جسے ’’لٹل انڈیا‘‘ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔ دوسرا اسٹاپ ٹرافلگار اسکوائر تھا جہاں دیوالی منانے کی بھی تیاریاں کی جارہی ہیں۔ ’’یو کے ویلکمس مودی‘‘ نامی تنظیم کی کمیٹی سے تعلق رکھنے والی میوری پرمار نے بتایا کہ ہم نے ہندوستان میں ’’چائے پہ چرچا‘‘ کا انعقاد کیا تھا اور اب برطانیہ میں ’’بس پہ چرچا‘‘ کا انعقاد کیا جائے گا۔ 13 نومبر کو یہاں کے ویمبلے اسٹیڈیم میں نریندر مودی کا شایان شان استقبال کرنے کیلئے 400 سے زائد کمیونٹی تنظیموں نے کو اس اولمپک طرز کے استقبالیہ کا بطور ویلکم پارٹنر بننے رجسٹریشن کروایا ہے۔ روایتی طور پر ناریل پھوڑ کر بس کا افتتاح کرنے والے لارڈ ڈالر پوپٹ نے کہا کہ اس بس کے ذریعہ ہم نے ایک بار پھر ثابت کردیا ہے کہ ہند ۔ برطانیہ دونوں ہی ممالک کے عوام کو ایک دوسرے سے قریب تر کرنے کے خواہاں ہیں۔ مسٹر پوپٹ نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ اس وقت برطانیہ میں بھی مودی کا جنون (مانیا) سر چڑھ کر بول رہا ہے اور کمیونٹی کے لوگ ایک دوسرے سے ملاقات کرتے ہوئے مکمل تعاون کررہے ہیں جسے دیکھ کر بڑی خوشی ہوتی ہے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہیکہ برطانیہ میں ہندوستانی نژاد پارلیمنٹرین کیتھ واز جنہیں طویل ترین عرصہ تک رکن پارلیمان رہنے کا اعزاز حاصل ہے، انہوں نے بھی لوگوں کو مودی ایکسپریس کا حصہ بننے کیلئے حوصلہ افزائی کی۔

انہوں نے کہا کہ اگر آپ اپنے اوئسٹر کارڈس گھر پر بھول گئے ہیں تو پھر مودی ایکسپریس کا حصہ بننے کیلئے مودی کارڈس لے آئیں اور یہ کام آپ جہاں ہیں وہیں رہ کر بھی کرسکتے ہیں۔ دوسری طرف برینٹ کونسل کے لیڈر محمد بٹ نے بتایا کہ وہ اس دن کا بے چینی سے انتظار کررہے ہیں کہ جب وہ برینٹ میں نریندر مودی کا استقبال کریں گے جس کیلئے تمام کمیونٹیز میں زبردست جوش و خروش پایا جاتا ہے۔ ’’یو کے ویلکمس مودی‘‘ استقبالیہ میں زائد از 60,000 افراد کی شرکت متوقع ہے اور آئندہ کچھ دنوں یا دو ہفتوں کے بعد ویمبلے اسٹیڈیم کی جانب سے ٹکٹس بھی تقسیم کئے جائیں گے۔ برطانیہ کے زائد از 250 شہروں اور مستقروں سے لوگوں نے دعوت ناموں کیلئے درخواستیں دے رکھی ہیں۔ دریں اثناء مودی بس ایکسپریس کے کوآرڈینیٹر نتن پالن نے بتایا کہ ان کی ویب سائٹ آئندہ ہفتہ سے براہ راست ہوجائے گی جس کے بعد لوگ مودی ایکسپریس بس کیلئے ملک کے کسی بھی حصہ سے استقبالیہ تقریب میں شرکت کیلئے ٹکٹ بک کرواسکتے ہیں۔ کہا جارہا ہیکہ ویمبلے میں ہندوستانی کمیونٹی کے زائد از 1.5 ملین افراد شرکت کریں گے جس میں آتش بازی کا بھی زبردست مظاہرہ کیا جائے گا۔ استقبالیہ تقریب میں شرکت کیلئے سب سے کم عمر درخواست گذار کی عمر دو ماہ بتائی گئی ہے جبکہ معمر ترین درخواست گذار کی عمر 100 سال ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT