Thursday , March 30 2017
Home / اضلاع کی خبریں / بلدیہ کریم نگر کے ملازمین کو وجہ نمائی نوٹس

بلدیہ کریم نگر کے ملازمین کو وجہ نمائی نوٹس

بدعنوانی کی شکایت پر تین سابقہ کمشنرس اور سات دیگر عہدیداروں کیخلاف کارروائی
کریم نگر۔ 22 نومبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) کریم نگر بلدیہ کارپوریشن میں مختلف ترقیاتی کاموں کے نام مرضی کے مطابق پرویسیڈنگ کے ذریعہ لاکھوں روپیوں کے فنڈس کی اجرائی بدعنوانیاں، نظروں کے سامنے روبہ عمل غیرمجاز تعمیر اور منظوری کو نظرانداز کئے جانے قانون کی خلاف ورزی کے مرتکب عہدیداروں کے خلاف کارروائی کئے جانے کے لئے کسی نہ کسی طریقہ سے اب دباؤ بڑھ رہا ہے۔ عمداً کی گئی غلطیوں کے سلسلے میں تین سابق کمشنرس کے بشمول جملہ 10 عہدیداروں کو وجہ نمائی نوٹس جاری کی گئی ہے۔ اس سلسلے میں چارج میموز بھی جاری کرتے ہوئے حکومت کے اسپیشل سیکریٹری ایم بی گوپال پیر کو احکامات جاری کرچکے ہیں۔ اس تنازعہ میں ملوث عہدیدار ملازمین فی الوقت نئے اضلاع سرسلہ، جگتیال، حیدرآباد، نظام آباد اور کریم نگر میں برسرخدمت ہیں۔ کریم نگر کارپوریشن میں جعلی تیار کردہ بلوں پر ادائیگی تعمیراتی کاموں میں قاعدوں کی خلاف ورزی کرتے ہوئے منظوری دی اور کارپوریشن کو ہونے والی آمدنی کا بھی نقصان کیا۔ دیڑھ سال قبل ایم ایل اے گنگولہ کملاکر کے کچھ حمایتی شکایت کی بھی 5 اگست 2014ء کو چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے پہلے اجلاس کریم نگر میں انعقاد کے موقع پر سب کلکٹر کے برسرخدمت آئی اے ایس آفیسر سری کھیش بی، لنکر کو کریم نگر کمشنر کا تقرر عمل میں لایا گیا تھا۔ اس سے قبل 10 افراد کو حکومت نے وجہ نمائی نوٹس جاری کی جن میں 3 سابقہ کمشنرس ہیں۔ کے وی رمنا چاری فی الحال سدی پیٹ میں ہیں۔ سری کھیش بی لنکر ڈپٹیشن پر آندھرا میں ہیں۔ کے رمیش کو حکومت نے چارج میمو دے دیا ہے۔ اسی طرح اسسٹنٹ سٹی پلاننگ نظام آباد کے اوما دیوی، ضلع ٹاؤن سٹی پلاننگ آفیسر بی ونکنا، ٹاؤن پلاننگ آفیسر کے کروناکر فی الحال جگتیال میں ہیں۔ وائی سبھاش حیدرآباد میں اے سی پی ہیں۔ ٹاؤن پلاننگ سوپروائزرس سید سعیدالدین (کورٹلہ)، ایم سرینواس (بیلم پلی)، اے انجنا (سرسلہ) کو وجہ نمائی نوٹس جاری ہوچکی ہے۔ بعدازاں تحقیقات کا آغاز ہوگا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT