Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / بلیک منی کے رضاکارانہ اعلان پر رازداری

بلیک منی کے رضاکارانہ اعلان پر رازداری

30 ستمبر تک اسکیم سے استفادہ کی سہولت
نئی دہلی ۔ 15 ۔ ستمبر : ( سیاست ڈاٹ کام) : حکومت نے آج بتایا کہ جو لوگ 30 ستمبر تک اپنی بلیک منی کا اعلان کریں گے ان کے نام اور دولت کو صیغہ راز میں رکھا جائے گا ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ اسکیم کے تحت پیشکردہ تفصیلات کو منظر عام پر نہیں لایا جائے گا اور دوسرے محکمہ کے ساتھ اطلاعات کا تبادلہ عمل میں نہیں آئے گا ۔ انہوں نے بتایا کہ کمشنر انکم ٹیکس ، اور سنٹر لائنزڈ پراسسنگ سنٹر کو پیش کردہ اطلاعات کو عدلیہ سے بھی راز میں رکھا جائے گا ۔ اس خصوص میں فارم 2 اور فارم 4 استعمال کیا جائے گا ۔ علاوہ ازیں جیوسڈکشنل پرنسپال کمشنر کو پیش کردہ قرار نامہ ( ڈیکلریشن ) دوسرے محکمہ کے کسی عہدیدار کے یہاں افشاء نہیں کیا جائیگا ۔ واضح رہے کہ حکومت نے بلیک منی کو باقاعدہ بنانے کے لیے یکم جون کو ای ڈی ایس اسکیم کا آغاز کیا تھا جو کہ 30 ستمبر کو اختتام پذیر ہوگی ۔۔ یو این آئی کے بموجب حکومت نے آج پھر کہا کہ ‘آمدنی کے اعلان کے منصوبہ 2016’ کے تحت معلنہ جائیداد میں شامل خفیہ معلومات کی کسی بھی دوسری ایجنسی یا افسر کو باخبر نہیں کیا جائے گا۔مرکزی حکومت کی ‘آمدنی کے اعلان کے منصوبہ 2016’ کے تحت کوئی بھی شخص اپنی ایسی جائیداد کا انکشاف کر سکتا ہے جس کا ٹیکس پہلے ادا نہیں کیا گیا ہے ۔ اس طرح ایک مقرر ٹیکس ادا کرنے کے بعد اس غیر قانونی اثاثے کو جائز کیا جا سکتا ہے ۔ اس منصوبہ کی میعاد 30 ستمبر تک ہے ۔ منصوبہ بندی کے تحت حاصل معلومات کو راز میں رکھنے کے تعلق سے ظاہر کردہ خدشات پر حکومت نے کہاہے کہ اطلاعات خفیہ رہیں گی اور کسی کو بتا یا نہیں جائے گا۔ حکومت کے ایک بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ بنگلور میں انکم ٹیکس کمشنر، مرکزی پروسیسنگ سینٹر کے سامنے معلنہ آمدنی کی اطلاع اعلیٰ کمشنر یا دیگر حکام کو نہیں دی جائے گی۔ اسی طرح سے اعلیٰ انکم ٹیکس کمشنر کے سامنے جو اعلان کیا جائے گا اس کی اطلاع محکمہ کے دیگر افسران یا جائیداد حکام کو نہیں دی جائے گی۔ اس سے متعلق دیگر اطلاعات کو آن لائن بھی نہیں دیکھا جا سکے گا۔

TOPPOPULARRECENT