Wednesday , September 20 2017
Home / دنیا / بم کی دھمکی، ایرفرانس کے دو طیاروں کی امریکہ میں محفوظ لینڈنگ

بم کی دھمکی، ایرفرانس کے دو طیاروں کی امریکہ میں محفوظ لینڈنگ

لاس اینجلس ۔ 18 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ایرفرانس کو کے امریکہ سے پیرس پرواز کرنے والے دو طیاروں میں بم رکھنے کی گمنام اطلاع ملنے کے بعد ان دونوں طیاروں کا رخ موڑ دیا گیا اور محفوظ لینڈنگ عمل میں آئی۔ لاس اینجلس سے پرواز کرنے والے فلائٹ نمبر 65 اور واشنگٹن سے پرواز کرنے والے فلائٹ نمبر 55 میں بم رکھنے کے بارے میں ایرفرانس کو گمنام دھمکیاں موصول ہوئی تھیں۔ پیرس میں گذشتہ ہفتہ 129 افراد کی ہلاکت کا سبب بننے والے دہشت گرد حملوں کے چند دن بعد ہی یہ واقعہ پیش آیا ہے۔ حملوں کے بعد فرانسیسی دارالحکومت اور اطراف کے علاقوں میں خوف و ہراسانی کی لہر پیدا ہوگئی ہے۔ ایرفرانس نے کہا کہ ان دونوں طیاروں نے بحفاظت لینڈ کی جن کی تلاش جاری ہے۔ اس ادارہ نے کہا کہ ’’احتیاطی تدابیر کے طور پر یہ قدم اٹھایا گیا اور تمام ضروری سیکوریٹی معائنے کئے جارہے ہیں۔ اس مقصد کیلئے ہی ایر فرانس نے اپنے طیاروں کی لینڈنگ کا فیصلہ کیا تھا۔ ایرفرانس نے کہا کہ حکام اس ٹیلیفون کال ذرائع کا پتہ چلارہے ہیں۔ مقامی حکام ان دونوں طیاروں کے علاوہ تمام مسافرین اور لگیج کی بھی جانچ کررہے ہیں۔ یہ بھی واضح نہیں ہوسکا ہے کہ آیا ایک ہی شخص نے دونوں دھمکی آمیز کال کئے تھے۔ بیرونی واشنگٹن کے ڈوس پنٹرنیشنل ایرپورٹ سے 262 مسافرین کے ساتھ پرواز کرنے والے طیارہ کا رخ نووا اسکائیا کے ہیلی فیکس ایرپورٹ کی سمت موڑ دیا گیا تھا جہاں اس نے مقامی وقت کے مطابق 10.15 بجے لینڈنگ کی۔ 497 مسافرین اور ارکان عملہ کے ساتھ لاس اینجلس سے پیرس پرواز کرنے والے طیارہ نے یوٹھا کے سالٹ لیک ایرپورٹ پر بحفاظت لینڈنگ کی۔ ایک مسافر نے کہا کہ طیارہ میں یہ اعلان کیا گیا تھا کہ پرواز سے متعلق مسائل کے پیش نظر سالٹ لیک پر لینڈنگ کی جارہی ہے جہاں تمام مسافر سکون و اطمینان کے ساتھ طیارہ سے اتر گئے اور کوئی سنسنی یا آسانی نہیں دیکھی گئی۔ واضح رہے کہ پیرس دہشت گرد حملے کے بعد منگل کو ہانوور میں جرمنی اور ہالینڈ کے مابین منعقدہ دوستانہ فٹبال میچ اسٹیڈیم میں بم رکھنے کی واضح دھمکی کے بعد منسوخ کردیا گیا تھا۔ امریکی سکریٹری اداروں اور ایف بی آئی کے اعلیٰ عہدیداروں نے دونوں طیاروں کی زبردست تلاشی لی۔ تاہم کوئی دھماکو مواد دستیاب نہیں ہوا اور دونوں طیاروں میں بم رکھنے کی اطلاعات بالآخر غلط ثابت ہوئیں۔ دونوںطیاروں کے مسافرین کو پہلے ہی دوسرے طیاروں کے ذریعہ پیرس روانہ کیا جاچکا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT