Tuesday , August 22 2017
Home / Top Stories / بندرگاہوں کی ترقی ،ایک لاکھ کروڑ کی سرمایہ کاری ضروری

بندرگاہوں کی ترقی ،ایک لاکھ کروڑ کی سرمایہ کاری ضروری

بحریہ چوٹی کانفرنس سے وزیراعظم نریندر مودی کا خطاب، کئی پراجکٹس کا اعلان
ممبئی ۔ 14 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے اولین میری ٹائم انڈیا چوٹی کانفرنس کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی 7500 کیلو میٹر طویل ساحلی علاقہ میں بندرگاہوں کی ترقی کیلئے عالمی برادری کی جانب سے ایک لاکھ کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا نظریہ بندرگاہوں کی صلاحیت کو 1400 ملین ٹن سے اضافہ کرکے 3000 ملین ٹن کردینا اور 5 نئی بندرگاہوں کا قیام ہے۔ انہوں نے کہا کہ بحری جہاز رانی کا شعبہ طویل مدتی ردوبدل کیلئے تیار ہے۔ حکومت کے اس شعبہ کیلئے منصوبوں کی تفصیلی بیان کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ملک میں 14000 کیلو میٹر سے زیادہ اندرون ملک آبی گذرگاہیں موجود ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ باہمی تعاون کی ضرورت ہے جس سے نہ صرف معاشی سرگرمی کیلئے سہولتیں فراہم ہوں گی بلکہ ممالک اور تہذیبوں کے درمیان ربط پیدا ہوگا۔ ہندوستان کی ایک شاندار بحری جہاز رانی تاریخ ہے اور ہم مستقبل میں اس کو مزید بہتر بنانے کی کوشش کررہے ہیں۔ ان کی تقریر کا مرکزی موضوع پانچ نئی بندرگاہوں کا قیام اور موجودہ بندرگاہوں کی ترقی تھا۔

انہوں نے عالمی سطح پر سرمایہ کاروں سے اس شعبہ میں سرمایہ کاری کی خواہش کرتے ہوئے انہیں شراکت داری کی پیشکش کی۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ دو سال سے ہماری بڑی بندرگاہیں اپنی صلاحیت میں 10 لاکھ ٹن کا سالانہ اضافہ کررہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت 40 ساحلی خصوصی معاشی زونس کو ترقی دینے کا منصوبہ رکھتی ہے جس سے ملازمتوں کے 10 لاکھ نئے مواقع حاصل ہوں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ بڑی بندرگاہوں میں کافی قدرتی وسائل موجود ہیں اور انہوں نے امید ظاہر کی کہ سالانہ ڈھائی سے ارب روپئے کی سرمایہ کاری اس شعبہ کی بہتری کیلئے حاصل ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT