Wednesday , June 28 2017
Home / سیاسیات / بنگال کے بلدی چنائو میں ٹی ایم سی کی بڑی کامیابی

بنگال کے بلدی چنائو میں ٹی ایم سی کی بڑی کامیابی

گورکھا جن مکتی مورچہ کی 10 سالہ بالادستی ختم ، ممتا بنرجی کی ووٹروں کو مبارکباد
کولکاتا ، 17 مئی (سیاست ڈاٹ کام) ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) نے آج بنگال میں بلدی چناؤ میں بڑی کامیابی حاصل کرتے ہوئے سات کے منجملہ چار بلدی اداروں پر قبضہ کرلیا اور پہاڑی خطے میں گورکھا جن مکتی مورچہ (جی جے ایم) کی 10 سالہ بالادستی ختم کردی۔ ٹی ایم سی نے سطح مرتفع کے علاقوں میں ڈومکل، رائے گنج اور پوجالی میں اور پہاڑی علاقے میں میریک میں فیصلہ کن اکثریت حاصل کرلی ہے۔ چیف منسٹر ممتا بنرجی نے مسرت بھرا ٹوئٹ کیا: ’’پہاڑیاں (والی آبادیاں خوشی سے) مسکرا رہی ہیں۔‘‘ ترنمول لیڈر نے ایک اور ٹوئٹ میں کہا کہ ما ،ماٹی ، منوش کو مبارکباد کہ ہم پر پھر ایک بار بھروسہ جتایا ہے۔ جی جے ایم نے پہاڑی علاقوں میں تین بلدیات دارجیلنگ، کرسیانگ اور کالم پونگ جیت کر اپنی اجارہ داری برقرار رکھی ہے۔ ضلع مشیر آباد کے دومکل میں ٹی ایم سی نے 21 میں سے 18 وارڈ جیتے ہیں، کانگریس نے 2 اور سی پی آئی (ایم) کو ایک پر کامیابی ملی ہے۔ بلدی چنائو کے نتائج لگ بھگ پوری ریاست میں ممتا بنرجی کے دبدبے کی برقراری کو ظاہر کرتے ہیں۔ کیوں کہ دو بڑی اپوزیشن پارٹیاں بایاں بازو اور کانگریس نے مل کر صرف 6 نشستیں جیتے ہیں۔ بی جے پی کی نظریں بنگال پر لگی ہیں

جہاں وہ اگلے اسمبلی انتخابات میں ترنمول کا مقابلہ کرنے کی امید رکھتی ہیں لیکن اسے بھی پسپا ہونا پڑا جیسا کہ اس کو صرف 3 نشستیں ملی ہیں۔ ریاستی صدر بی جے پی دلیپ گھوش نے کہا کہ ہم سب جانتے ہیں کہ ٹی ایم سی نے یہ انتخابات جیتنے کے لیے پیسے اور طاقت کا استعمال کیا ہے۔ جمہوریت کا ان انتخابات میں بری طرح گلا گھونٹ دیا گیا ہے۔ بی جے پی نے ایک نشست ضلع شمالی دیناچپور کی رائے گنج میونسپلٹی میں اور دو ن نشستیں جنوبی 24 پرگنا کے پوجالی میں جیتے ہیں۔ ٹی ایم سی نے رائے گنج میں 27 میں سے 24 وارڈ جیت لیے جہاں کانگریس کو دو وارڈ پر کامیابی ملی۔ پوجالی میونسپلٹی میں ممتابنرجی کی پارٹی نے 16 میں سے 12 وارڈ جیتے جبکہ کانگریس اور آزاد امیدوار کو ایک ایک نشست حاصل ہوئی۔ جی جے ایم نے اگرچہ پہاڑی علاقوں میں تین بلدی اداروں پر قبضہ برقرار رکھنے میں کامیابی حاصل کی لیکن ٹی ایم سی نے میریک میں 9 میں سے چھ نشستیں جیت کر قابل لحاظ مظاہرہ کیا ہے۔ بقیہ نشستیں جی جے ایم کے حصے میں آئیں۔ صدر پردیش کانگریس ادھیر چودھری نے ترنمول اقتدار کو مطلق العنان حکمرانی قرار دیا۔ سی پی آئی (ایم) لیڈر سوجن چکرورتی نے بھی اسی طرح کے خیالات کا اظہار کیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT