Friday , October 20 2017
Home / عرب دنیا / بنگلہ دیشی عدالت میں 17 عسکریت پسندوں کو 10 سال کی سزائے قید

بنگلہ دیشی عدالت میں 17 عسکریت پسندوں کو 10 سال کی سزائے قید

ڈھاکہ ۔ 10 اگست (سیاست ڈاٹ کام) ممنوعہ جماعت المجاہدین بنگلہ دیش کے 17 کارکنوں کو آج 10 سال کی قید بامشقت بنگلہ دیش کی ایک عدالت میں سنائی گئی کیونکہ وہ 2005ء میں ملک گیر سطح پر بیک وقت بم دھماکے کرنے میں ملوث ثابت ہوئے تھے۔ عینی شاہدین اور وکلاء نے کہا کہ مجرموں میں سے 12 کو شخصی طور پر مقدمہ کا سامنا ہوا جبکہ باقی مفرور ہیں اور ان پر ان کی غیرحاضری میں 17 اگست کے بم دھماکوں کے الزام میں مقدمہ چلایا گیا۔ ان دھماکوں سے دو افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ ڈھاکہ کی تیز رفتار مقدمہ ٹریبونل کے جج عبدالرحمن سردار نے جماعت المجاہدین بنگلہ دیش کے کارکنوں کو ڈپٹی کمشنر انتظامیہ ضلع قاضی پور کے مضافات میں بم دھماکے کرنے کا خاطی قرار دیا۔ عدالت نے ان پر فی کس 10 ہزار ٹکا جرمانہ بھی عائد کیا۔ جرمانہ ادا نہ کرنے کی صورت میں انہیں مزید ایک سال کی سزائے قید بھگتنی ہوگی۔ جماعت المجاہدین بنگلہ دیش کے کارکنوں نے 500 آلات کے ذریعہ 300 مقامات پر 64 انتظامی اضلاع میں سے 63 میں اندرون نصف گھنٹہ دھماکے کئے تھے۔ پولیس نے 2005ء میں ابتدائی فرد جرم اور آئندہ سال ضمنی فردجرم عائد کیا تھا۔ مقدمہ کا آغاز 2012ء میں ہوا تھا۔ جنوب مغربی جھالہ کتی میں ایک عدالت نے 6 ماہ کی سماعت کے بعد فیصلہ سنایا تھا جس میں 5 جماعت المجاہدین بنگلہ دیش کارکنوں کو 2007 ء میں ایک وکیل استغاثہ کے قتل کے جرم میں سزائے موت دی گئی تھی۔

TOPPOPULARRECENT