Sunday , October 22 2017
Home / دنیا / بنگلہ دیش دہشت گرد حملہ کے دو مزید ملزم گرفتار

بنگلہ دیش دہشت گرد حملہ کے دو مزید ملزم گرفتار

دہشت گردوں کو پناہ دینے کا الزام ‘ کرایہ داروں کی تفصیلات سے پولیس کو لاعلم رکھا گیا تھا
ڈھاکہ ۔17جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) کارگذار نائب وائس چانسلر خانگی یونیورسٹی اور ان کے دو رشتہ داروں کو بنگلہ دیش میں اسلام پسندوں کو جنہوں نے بدترین دہشت گرد حملہ ایک ہوٹل پر کیا تھا ‘ الزام میں گرفتار کرلیا گیا ۔ انسداد دہشت گردی اور بین الاقوامی جرائم کے شعبہ میں انہیں گرفتار کرلیا ۔ مبینہ طور پر نائب وائس چانسلر نے اپنا ایک مکان حملہ کے ذمہ داروں کو کرایہ پر دیا تھا ۔ پولیس کے ترجمان کے بموجب پولیس کی ہدایات کے باوجود  پروفیسر احسن نے کرایہ داروں سے ان کی تفصیلات حاصل کرکے  انہیں قریبی پولیس اسٹیشن کو فراہم نہیں کیا تھا ۔ جاریہ سال ماہ مئی میں انہوں نے اپنا مکان دہشت گردوں کو کرایہ پر دیا تھا ۔ احسن شمالی بنگلہ دیش میں ایک یونیورسٹی کے اسکول برائے صحت و زندگی کے علوم کے کارگذار پرو وائس چانسلر اور ڈین ہیں ۔ پولیس کے بموجب گرفتار شدہ دیگر دو افراد میں سے ایک اُن کا بھتیجہ اور مکان کی عمارت کا منیجر ہے ۔ ایک اور پولیس عہدیدار کے بموجب انسداد دہشت گردی شعبہ نے پتہ چلایا ہے کہ ریت سے بھرے ہوئے کارٹونس کرایہ داروں کے فلیٹس سے دستیاب ہوئے ہیں ۔ پولیس کو شک ہے کہ ان کارٹونس میں بم پوشیدہ رکھ کر مکان منتقل کئے گئے تھے ۔ یونیورسٹی کے کم از کم دو طالب علم حملہ کے بعد سے لاپتہ ہیں جنہیں مبینہ طور پر جماعت المجاہدین بنگلہ دیش میں ملازمت فراہم کی گئی ہے ۔ یونیورسٹی صیانتی محکموں کے زیر نگرانی ہے ۔ جاریہ ہفتہ کے اوائل میں نورالاسلام ناہید نے کہا تھا کہ یونیورسٹی گرانٹس کمیشن نے یونیورسٹی کے احاطہ کا کئی بار دورہ کیاتھا ۔

TOPPOPULARRECENT