Wednesday , August 23 2017
Home / Top Stories / بنگلہ دیش سے طوفان ’رونو‘ٹکراگیا ‘ 24افراد ہلاک

بنگلہ دیش سے طوفان ’رونو‘ٹکراگیا ‘ 24افراد ہلاک

لاکھوں افراد بے گھر ‘ پانچ لاکھ کا محفوظ مقامات پر تخلیہ ‘ دیگر 21لاکھ کے تخلیہ کا منصوبہ
ڈھاکہ۔22مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) کم از کم 24 افراد ہلاک اور دیگر 100 زخمی ہوگئے جب کہ سمندری طوفان ’رونو‘ بنگلہ دیش کے جنوبی ساحل پر تباہی مچانے کی وجہ بنا ۔ زمین کھسکنے کے واقعات پیش آئے جس کی وجہ سے عہدیداروں کو تقریباً پانچ لاکھ افراد کا تخلیہ کروانا پڑا ۔ سمندری طوفان کے ساتھ ہوا کی رفتار 88کلومیٹر فی گھنٹہ تھی ۔ یہ سمندری طوفان باری سال ۔ چٹگانگ کے علاقہ میں آیا جس کا اثر پورے ملک میں محسوس کیا گیا ۔ بیشتر مقامات پر بارش ہوئی اور گرج چمک کے ساتھ بوچھاریں پڑیں جن کے ساتھ عارضی طور پر آندھی اور تیز رفتار ہوا بھی صبح کے وقت چلتی ہوئی محسوس کی گئی ۔ ہلاکتوں کی تعداد 24 ہوگئی جب کہ کل رات بھر میں مزید چار افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاع ملی ۔ بنگلہ دیش کے آفات سماوی انتظامیہ محکمہ کے ڈائرکٹر جنرل ریاض احمد نے کہا کہ 11افراد بشمول نابالغ بچے شمالی مشرقی ساحلی شہر چٹگانگ میں ہلاک ہوگئے ۔ یہ علاقہ سمندری طوفان سے بدترین متاثرہ علاقہ ہے ۔ جنوب مغربی علاقہ بھولا شمال مغربی نوا کھالی اور کاکس کا بازار ساحلی اضلاع میں سمندری طوفان سے تین افراد ہلاک ہوئے جب کہ 85ہزار مکانوں کو نقصان پہنچا ۔ تجارتی عمارتیں ساحلی علاقہ میں متاثر ہوئیں ‘ کئی مہلوکین سیلاب کے پانی میں ڈوب کر مرگئے جس کی وجہ سے زمین کھسکنے کے واقعات ‘ مکانوں کا انہدام اور جڑوں سے درختوں کے اکھڑ کر گرنے کے واقعات میں دیگر افراد ہلاک ہوئے ۔

ہلاکتوں کی جملہ تعداد اب 24ہوگئی ہے ۔ بانس کھالی کے چٹگانگ پولیس اسٹیشن کے آفیسر انچارج نے اطلاع دی کہ 7 افراد ہلاک ہوگئے ۔یہ زمین کھسکنے کے واقعات اور پانی میں غرق ہونے کی وجہ سے ہلاک ہوئے ہیں ۔ آفات سماوی انتظامیہ وزارت کے ترجمان نے کہا کہ سمندری طوفان سے متاثرہ علاقوں سے پانچ لاکھ افراد کا محفوظ پناہ گاہوں میں منتقلی عمل میں آئی ۔ مزید 21لاکھ افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کرنے کی تیاریاں جاری ہیں ۔ ماہرین موسمیات کے بموجب سمندری طوفان پہلے جنوب مغربی ساحل سے ٹکرا گیا اس کے بعد جنوب مشرق کی طرف پیشرفت کرگیا جب کہ سمندر انتہائی متلاطم ہے ۔ شاہ امانت انٹرنیشنل ایئرپورٹ چٹگانگ نے طوفان ’رونو‘ کی وجہ سے اپنی تمام پروازیں معطل کردی ہیں ۔ ماہرین کے بموجب ہلاکتوں کی تعداد ساحلی علاقہ میں 11اموات کی بہ نسبت بہت کم واقع ہوئی ہیں ۔ دن کے وقت جب کہ حکومت نے اجتماعی تخلیہ کی مہم چلانے کا اعلان کیا تھا جب کہ مقامی محکمہ موسمیات کے دفتر نے مقامی انتباہی سگنلس خطرہ کے سطح تک بلند کردیئے تھے ۔ چار ساحلی بندرگاہوں میں جو پورے ساحلی علاقہ کا احاطہ کرتی ہے چوکسی اختیار کی گئی تھی ۔ قبل ازیں چٹگانگ میں ریڈالرٹ جاری کیا گیا تھا اور بحری جہازوں کو بندرگاہ سے فوری روانہ ہوجانے اور محفوظ مقام پر لنگرانداز ہونے کی ہدایت دی گئی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT