Wednesday , August 23 2017
Home / Top Stories / بنگلہ دیش میں تان پورہ کے ماہر یونیورسٹی پروفیسر کا قتل

بنگلہ دیش میں تان پورہ کے ماہر یونیورسٹی پروفیسر کا قتل

آئی ایس آئی ایس کارکنوں نے گھر کے قریب حملہ کرکے ہلاک کردیا
ڈھاکہ۔ 23 اپریل ۔(سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش کے شمال مغربی شہر راج شاہی میں نامعلوم حملہ آوروں نے ایک یونیورسٹی پروفیسر کو خنجر کے وار کر کے موت کے گھاٹ اُتار دیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ یہ ہلاکت بھی حال ہی میں ہونے والی سیکولر بلاگرز کی ہلاکتوں کے زمرے میں آتی ہے۔ آئی ایس آئی ایس دہشت گردوں نے پروفیسر کے گھر کے قریب حملہ کرکے ہلاک کردیا۔ ’اے ایف پی‘ نے پولیس کے حوالے سے بتایا ہے کہ شہر کی سرکاری یونیورسٹی میں پڑھانے والے انگریزی کے پروفیسر 58 سالہ رضا الکریم صدیقی پر عقب سے اُس وقت حملہ کیا گیا جب وہ اپنے گھر سے بس سٹاپ کی طرف جا رہے تھے۔ راج شاہی کی میٹرو پولیٹن پولیس کے کمشنر محمد شمس الدین نے بتایا کہ پروفیسر کی گردن پر خنجر سے کم از کم 3 مرتبہ وار کیا گیا، جس سے وہ 70 سے 80 فیصد کٹ گئی، حملے کی نوعیت سے معلوم ہوتا ہے کہ یہ شدت پسند گروپوں کی کارروائی ہے۔ اس سے قبل گذشتہ سال چار اہم بلاگروں کو چاقو اور چھرے کے حملے میں ہلاک کیا جا چکا ہے۔ نائب پولیس کمیشنر ناہید الاسلام نے بتایا کہ پروفیسر صدیق مختلف قسم کے ثقافتی پروگرامز میں شریک رہتے تھے اور انھوں نے باگ مارا میں ایک سکول قائم کیا تھا۔ یہ علاقہ کالعدم تنظیم جمیعت المجاہدین (جے بی ایم) کا کبھی گڑھ کہا جاتا تھا۔ گذشتہ سال جے بی ایم کے چند اراکین کو اطالوی کیتھولک پادری پر حملے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ اس سے قبل رواں ماہ کے اوائل میں قانون کے ایک بنگلہ دیشی طالب علم کو دارالحکومت ڈھاکہ میں گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔ نام نہاد تنظیم دولت اسلامیہ نے ان میں سے بعض ہلاکتوں کی ذمہ داری قبول کی ہے لیکن آزادانہ طور پر ان کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔

TOPPOPULARRECENT