Wednesday , September 20 2017
Home / دنیا / بنگلہ دیش میں جماعت اسلامی کے امیر کو کسی بھی وقت پھانسی

بنگلہ دیش میں جماعت اسلامی کے امیر کو کسی بھی وقت پھانسی

ڈھاکہ ۔ 5 مئی (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش کی سپریم کورٹ نے جماعت اسلامی کے امیر مطیع الرحمان نظامی کو سنائی گئی سزائے موت برقرار رکھنے کے فیصلے پر نظرِ ثانی کی اپیل بھی مسترد کر دی ہے۔ یہ اپیل مسترد ہونے کے بعد مطیع الرحمان کے پاس صرف صدر سے رحم کی اپیل کا متبادل باقی بچا ہے جبکہ جماعتِ اسلامی نے عدالتی فیصلے کے خلاف ملک گیر ہڑتال کا اعلان کیا ہے۔ بنگلہ دیش کی سپریم کورٹ نے رواں برس جنوری میں مطیع الرحمان نظامی کو 1971 کی جنگ آزادی کے دوران جنگی جرائم پر سنائی گئی سزائے موت کو برقرار رکھا تھا اور انھوں نے اس فیصلے پر نظرِ ثانی کی درخواست دائر کی تھی۔ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس سریندر کمار سنہا کی سربراہی میں چار ججوں پر مشتمل ایپلٹ ڈویڑن بینچ نے منگل کو مطیع نظامی کی نظرِ ثانی کی اپیل کی سماعت مکمل کی تھی اور جمعرات کو فیصلہ سناتے ہوئے ان کی درخواست مسترد کر دی۔ ملک کی سب سے بڑی اسلام پسند جماعت کے 72 سالہ سربراہ کو جنگی جرائم کے خصوصی ٹرائبیونل نے گذشتہ برس نسل کشی، قتل، تشدد اور عصمت ریزی کے 16 الزامات کے تحت سزائے موت دینے کا حکم دیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT