Tuesday , October 17 2017
Home / دنیا / بنگلہ دیش میں سرکاری ملازمین کو بیرونی شہریوں سے شادی کیلئے صدر کی اجازت لینا لازمی؟

بنگلہ دیش میں سرکاری ملازمین کو بیرونی شہریوں سے شادی کیلئے صدر کی اجازت لینا لازمی؟

ڈھاکہ 10 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) حکومت بنگلہ دیش نے پارلیمنٹ میں ایک بل پیش کیا ہے جس کے تحت تمام سرکاری ملازمین کیلئے لازمی قرار دیا گیا ہے کہ وہ کسی بیرون ملک کی خاتون سے شادی کرنے صدر مملکت کی پیشگی اجازت حاصل کریں بصورت دیگر اُنھیں ملازمت سے برخاست کردیا جائیگا۔ مقامی حکومت کے وزیر سید اشرف الاسلام نے گزشتہ شب پارلیمنٹ میں یہ بل پیش کیا جس کا عنوان تھا ’عوامی خدمت گذار (بیرونی شہریوں سے شادی) بل 2015 جس کے تحت بنگلہ دیشی شہریوں کیلئے (جو سرکاری ملازمت میں ہیں) یہ لازمی ہوگا کہ وہ کسی بیرونی ملک کے مرد یا خاتون سے شادی کیلئے صدر مملکت کی پیشگی اجازت حاصل کریں اور ایسا نہ کرنے والوں کو سرکاری ملازمت سے ہاتھ دھونا پڑیگا۔ ایوان کے اسپیکر نے بل کو پارلیمانی اسٹانڈنگ کمیٹی نظم و نسق عامہ سے رجوع کیا جہاں اندرون 60 یوم اس پر غور کیا جائیگا۔ پارلیمانی سکریٹریٹ کے عہدیدار نے یہ بات بتائی۔ بعدازاں بل کو دوبارہ کمیٹی کی سفارشات کے ساتھ ایوان میں بھیجا جائیگا تاکہ اُسی مطابقت سے اقدامات کئے جاسکیں۔

TOPPOPULARRECENT