Friday , August 18 2017
Home / دنیا / بنگلہ دیش میں پانچ عسکریت پسند گرفتار

بنگلہ دیش میں پانچ عسکریت پسند گرفتار

یکم ؍ جولائی کے حملہ کے دوسرے سرغنہ کی شناخت ، پولیس کا بیان
ڈھاکہ ۔ 12 اگست (سیاست ڈاٹ کام) جماعت المجاہدین بنگلہ دیش کے پانچ ارکان کو ڈھاکہ کی ریسٹورنٹ پر حملہ میں ان کے رول کی پاداش میں گرفتار کرلیا گیا ہے۔ اس حملہ میں 22 افراد ہلاک ہوئے تھے۔ پولیس نے آج ملک کے اس بدترین دہشت گردانہ حملہ کے دوسرے سرغنہ کی شناخت کرلی ہے۔ پولیس ترجمان نے میڈیا والوں کو بتایا کہ ہماری انسداد دہشت گردی یونٹ نے ڈھاکہ کے علاقہ دارالسلام میں سویرے سے قبل کی گئی کارروائی میں جماعت المجاہدین بنگلہ دیش (جے ایم بی) کے پانچ نئے کارندوں کو حراست میں لے لیا۔ ان کے قبضہ سے 875 گرام دھماکو مادہ اور 25 ڈیٹونیٹرس برآمد کئے گئے۔ نوتشکیل شدہ ایلیٹ پولیس یونٹ کے سربراہ منیرالاسلام نے کہا کہ ابتدائی پوچھ تاچھ میں پانچوں نے یکم ؍ جولائی کو گلشن کیفے پر حملہ سے اپنے تعلق کا اعتراف کرلیا۔ اس حملہ میں 17 بیرونی شہری ہلاک ہوئے تھے۔ معلوم ہوا کہ یہ ارکان ڈھاکہ میں بم بنانے کے خام مادے لیکر داخل ہوئے تاکہ نقص امن پیدا کیا جاسکے۔ منیرالاسلام نے کہا کہ پولیس نے اس حملہ کے ایک دوسرے سرغنہ کی شناخت بھی کرلی جو اپنی تنظیم کا نام مرزان بتاتا ہے۔ ہمیں اس کی تصویر ملی ہے اور معلوم ہوا کہ وہی شخص ہے جس نے گلشن حملہ کی تصاویر اپنے فیس بک اکاونٹ پر ڈالے۔ اسے پکڑنے کیلئے تلاشی مہم شروع کی جاچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گلشن حملہ کے مرتکبین نے یہ تصاویر خفیہ ایپس استعمال کرتے ہوئے مرزان کو بھیجے تھے۔ یہ تبدیلی دو روز بعد ہوئی ہے جبکہ ایلیٹ اینٹی کرائم ریاپڈ ایکشن بٹالین نے 6 نئے جے ایم بی ارکان کی گرفتاری کادعویٰ کیا تھا۔ محروسین میں اس تنظیم کی ویب سائیٹ کا ایڈمنسٹریٹر شامل ہے۔

TOPPOPULARRECENT