Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / بنیادی سہولتوں کی تکمیل کیلئے دیگر محکمہ جات سے تال میل

بنیادی سہولتوں کی تکمیل کیلئے دیگر محکمہ جات سے تال میل

کمشنر جی ایچ ایم سی کا مختلف محکموں کے عہدیداروں کے ساتھ اجلاس
حیدرآباد ۔ 6 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : کمشنر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں انجام دئیے جانے والے ترقیاتی پروگراموں کی بروقت تکمیل کرنے کے علاوہ شہر کے عوام کو درپیش مسائل پر قابو پانے کے لیے مختلف محکمہ جات کے درمیان باہمی رابطہ کی شدید ضرورت ہے ۔ وہ آج مرکزی دفتر جی ایچ ایم سی میں منعقدہ 14 مختلف محکمہ جات سے وابستہ اعلیٰ عہدیداروں کے باہمی رابطہ اجلاس سے مخاطب تھے ۔ انہوں نے بتایا کہ کروڑہا روپیوں کے سرمایہ سے بڑے پیمانے پر ترقیاتی اسکیمات انجام دئیے جانے کے باوجود مختلف محکمہ جات کے درمیان باہمی رابطہ کی عدم موجودگی کے نتیجہ میں طویل عرصہ تک شہر کی عوام کو بھی کئی مسائل کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ عوام کو اہم بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے لیے انجام دئیے جانے والے پروگراموں کو اندرون مدت بلاکسی رکاوٹ تکمیل کرنے میں تعاون کرنے کی عہدیداروں سے انہوں نے خواہش کی ۔ انہوں نے بتایا کہ مختلف محکمہ جات کے عہدیداروں میں باہمی رابطہ کے لیے ہر ماہ ایک محکمہ کے دفتر میں اجلاس منعقد کرنے کے علاوہ سرکل اور زونل سطح پر بھی متعلقہ عہدیداروں کی جانب سے باہمی اجلاس منعقد کئے جائیں گے ۔ شہر حیدرآباد میں تعمیر کئے جانے والے ڈبل بیڈروم امکنہ کی تعمیر سے متعلق استفادہ کنندگان میں شعور بیدار کیا جائے گا ۔ کمشنر سٹی پولیس مسٹر مہیندر ریڈی ، منیجنگ ڈائرکٹر حیدرآباد میٹرو ریل مسٹر این وی ایس ریڈی ، ایڈیشنل کمشنر پولیس مسٹر جتیندر ، کلکٹر ضلع رنگاریڈی مسٹر رگھونندن راؤ ، کلکٹر ضلع حیدرآباد ، مسٹر راہول بوجا ، ایکزیکٹیو ڈائرکٹر ٹی ایس آر ٹی سی مسٹر پرشوتم ، منیجنگ ڈائرکٹر واٹر ورکس مسٹر جناردھن ریڈی نے بھی مخاطب کرتے ہوئے اپنے اپنے اقتباسات پیش کرتے ہوئے تمام محکمہ جات کے عہدیداروں کے درمیان باہمی رابطہ کی اہمیت پر زور دیا ۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر پولیس ٹریفک رنگاریڈی مسٹر اویناش موہنتی ، جوائنٹ کلکٹر ضلع حیدرآباد مسٹر اجیت کمار کے علاوہ آر اینڈ بی ، محکمہ برقی ، ایچ ایم ڈی اے ، نیشنل ہائی وے ، پولیوشن کنٹرول بورڈ اور دیگر جملہ 14 محکمہ جات سے متعلقہ عہدیداروں نے شرکت کی ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT