Wednesday , August 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / بولٹ کا 9 اولمپک گولڈز کیساتھ یادگار اختتام !

بولٹ کا 9 اولمپک گولڈز کیساتھ یادگار اختتام !

ریو ڈی جنیرو ، 20 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) شہرہ آفاق اسپرنٹر یوسین بولٹ نے لگاتار 3 اولمپکس کے 3،3 ایونٹس میں طلائی تمغے جیت کر منفرد تاریخ رقم کی۔ دنیا کے تیز ترین انسان کہلائے جانے والے بولٹ نے 2016ء کے ریو اولمپکس میں لگاتار 3 مختلف ایونٹس میں طلائی تمغے جیت کر تاریخ رقم کرتے ہوئے ان عالمی کھیلوں کے سفر سے یادگار وداعی لی ہے۔ صرف 30 لاکھ آبادی والے ملک جمیکا سے تعلق رکھنے والے دنیا کے تیز ترین اتھلیٹ یوسین بولٹ مسلسل 3 اولمپکس 2008ء میں بیجنگ اولمپکس (چین)، 2012ء میں لندن اولمپکس (برطانیہ) اور اب 2016ء میں ریو اولمپکس (برازیل) میں 3 مختلف ایونٹس (100 میٹر، 200 میٹر اور 100میٹر4x) میں گولڈ میڈل پر جیت کر اولمپکس کی تاریخ کے پہلے اتھلیٹ بن گئے۔ بولٹ نے 2017ء میں ہونے والی عالمی چمپئن شپ میں شرکت کے بعد ریٹائرمنٹ لینے کا اعلان کیا ہے۔ اولمپکس مقابلوں میں دنیا کے تیز ترین انسان یوسین بولٹ نے اپنا آخری گولڈ میڈل 4x100m ریلے ریس میں حاصل کیا۔ اس میڈل کے بعد ان کے اولمپک مقابلوں میں تمغوں کی مجموعی تعداد 9 ہوگئی جو تمام گولڈ میڈلز ہیں۔ یوسین بولٹ اتوار 21 اگست 2016ء کو اپنی 30ویں سالگرہ منائیں گے ۔ وہ 1986ء میں جمیکا کے صوبہ ٹریلونے میں پیدا ہوئے۔

جمیکن اسپرنٹر نے 2001ء میں ورلڈ یوتھ اتھلیٹکس چمپئن شپ سے اپنے کیرئیر کا آغاز کیا۔ انہوں نے 14 برس کی عمر میں ورلڈ یوتھ اتھلیٹکس چمپئن شپ میں 200 میٹر دوڑ میں شرکت کی لیکن وہ فائنل میں کوالیفائی نہ کرسکے۔ تاہم انہوں نے 2002ء ورلڈ جونیئر چمپئن شپ میں کامیابی حاصل کرکے جونیئرز ایونٹ میں پہلا طلائی تمغہ جیتنے کا اعزاز حاصل کیا۔ یوسین بولٹ نے پہلی بار میگا ایونٹ 2004ء ایتھنز اولمپکس میں حصہ لیا۔ مگر وہ پاؤں کی انجری کے باعث 200 میٹر ریس کے پہلے ہی راؤنڈ سے باہر ہوگئے۔ انہوں نے 2006ء انٹرنیشنل اسوسی ایشن آف اتھلیٹکس فیڈریشنز فائنلز میں تیسری پوزیشن حاصل کرکے کسی میگا ایونٹ میں پہلی مرتبہ کانسہ کا تمغہ جیتا تھا۔ بعدازاں جمائیکا کے اسٹار اسپرنٹر نے 2008ء اولمپکس میں کیرئیر میں پہلی بار لگاتار تین ایونٹس میں طلائی تمغہ جیتنے کا اعزاز حاصل کیا تھا۔ علاوہ ازیں وہ 2008، 2011، 2013 اور 2015 ورلڈ چمپئن شپ اور 2014ء کامن وپلتھ گیمز میں پہلی پوزیشن حاصل کرتے ہوئے سونے کا تمغہ جیت چکے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT