Friday , October 20 2017
Home / شہر کی خبریں / بچوں کو سرکاری رہائشی اسکولوں میں داخلے دلانے والدین پر زور

بچوں کو سرکاری رہائشی اسکولوں میں داخلے دلانے والدین پر زور

lمسلمانوں میں خاتمہ غربت کے لیے زکواۃ کے اجتماعی نظم کی ضرورت
lبھولکپور میں انجمن محبان اہلبیتؓ کے دوسرے مرکز کا افتتاح ، جناب عامر علی خاں کا خطاب
حیدرآباد ۔ 9 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : مسلمانوں میں صلاحیتوں کی کوئی کمی نہیں ، مسلم بچوں کو صرف صحیح راہ نمائی اور حوصلہ افزائی کی ضرورت ہے ۔ اگر ان کی حوصلہ افزائی کی جائے تو یقینا ہمارے بچے ملک و ملت کا نام روشن کرنے میں کوئی کسر باقی نہیں رکھیں گے ۔ حیدرآباد اور اطراف و اکناف میں بے شمار سلم علاقے ہیں جہاں کے بچوں کو زیور علم سے سجانے اور سنوارنے کی شدید ضرورت ہے اور یہ تب ہی ممکن ہے جب ملت کا ہر فرد سنجیدگی سے اس کا خیر میں حصہ لے ۔ ان خیالات کا اظہار نیوز ایڈیٹر سیاست جناب عامر علی خاں نے بھولکپور مشیر آباد کے غیور نوجوانوں کے قائم کردہ انجمن محبان اہلبیتؓ کے دوسرے تربیتی مرکز کا افتتاح انجام دینے کے بعد ڈینٹل اسسٹنٹ کا کورس مکمل کرنے والی لڑکیوں میں سرٹیفیکٹس کی تقسیم کرتے ہوئے اپنے خطاب میں کیا۔ واضح رہے کہ بھولکپور مشیر آباد کے نوجوانوں نے مقامی لڑکے لڑکیوں اور غریب خاندانوں کی مدد کے لیے سال 2012 میں یہ تربیتی سنٹر قائم کیا تھا جہاں خواتین کو دینی تعلیم دی جاتی ہے ۔ چھوٹے بچے اور بچیوں کے لیے قرات و نعت کی تربیت کا انتظام ہے ۔ طالبات کے لیے کمپیوٹر کلاس اور اسپوکن انگلش کی کلاس چلائی جاتی ہیں ۔ دلچسپی کی بات یہ ہے کہ لڑکیوں کو حفاظت خود اختیاری کی خصوصی تربیت بھی فراہم کی جاتی ہے ۔ اس کے علاوہ علاقہ میں کسی غریب خاندان کے رکن کی موت پر شامیانوں کی تنصیب ، تجہیز و تکفین کا بھی مفت انتظام کیا جاتا ہے ۔ جناب عامر علی خاں نے اپنا سلسلہ خطاب جاری رکھتے ہوئے انجمن کی سرگرمیوں پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ادارہ سیاست ، بھولکپور مشیر آباد کے ان نوجوانوں کی بھر پور حوصلہ افزائی کرے گا جو اپنے سینوں میں ملی ہمدردی کا جذبہ رکھتے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ دین اسلام میں حصول علم پر بہت زور دیا گیا ۔ ہمارے نبی کریم ﷺ کا ارشاد مبارک ہے ’ علم کا حاصل کرنا ہر مسلمان مرد و عورت پر فرض ہے ‘ اسی طرح آپ ﷺ کا یہ بھی ارشاد مبارک ہے ’اگر تمہیں علم حاصل کرنے چین بھی جانا پڑے تو جاؤ ‘ ۔ غرض دین اسلام میں حصول علم کی بار بار تاکید کی گئی یہی وجہ تھی کہ تقریباً 700 برسوں تک زندگی کے ہر شعبہ پر مسلمان چھائے رہے ۔ سائنس کے تمام شعبوں بشمول طب و جراحی ، انجینئرنگ ، علم البحر ، علم الفلکیات ، علم الارضیات غرض مسلمانوں نے ہر علم میں کمال حاصل کیا اور حقیقت میں ساری دنیا میں اپنی صلاحیتوں کے جھنڈے گاڑے ۔ اعلیٰ تعلیمی ادارے قائم کئے ۔ علم و ہنر کے چراغ روشن کئے ۔ لیکن جب یہی مسلمان علم کی نعمت سے محروم ہوئے تب پسماندگی کے دلدل میں جاگرے ۔ ہماری خوش نصیبی یہ ہے کہ ہمارے پاس زندگی کے ہر لمحہ رہنمائی کے لیے قرآن اور سنت رسول ؐموجود ہے ۔ یہ وہ نعمتیں ہیں جن پر عمل کیا جائے ہمیں دنیا کی کوئی طاقت ترقی سے نہیں روک سکتی ۔ جناب عامر علی خاں نے پر زور انداز میں یہ بھی کہا کہ الحمدﷲ مسلمانوں میں اہل ثروت حضرات کی کوئی کمی نہیں ، ہم کروڑہا روپئے کی زکواۃ دیتے ہیں ، سو دو سو روپئے کی ساڑی یا لنگی کسی غریب کو دے کر یہ سوچ لینا کے ہم نے زکواۃ ادا کردی ہے ٹھیک نہیں ہے بلکہ آج زکواۃ کے اجتماعی نظم کی ضرورت ہے ۔ اگر سال میں ایک مرتبہ ہم اپنی اور دیگر ارکان خاندان کی زکواۃ خاندان کے کسی غریب یا غریب پڑوسی کو ادا کردیں تو ہوسکتا ہے کہ وہ زکواۃ کی اس رقم سے کوئی کاروبار کر کے آنے والے برسوں میں خود زکواۃ دینے کے قابل ہوجائے ۔ نیوز ایڈیٹر سیاست جناب عامر علی خاں نے مسلمانوں پر زور دیا کہ وہ اپنے بچوں کو حکومت تلنگانہ کے رہائشی اسکولوں میں داخلہ دلائیں ۔ ان اسکولوں میں معیاری تعلیم فراہم کی جاتی ہے ۔ اس موقع پر نیوز ایڈیٹر سیاست کے ہاتھوں محلہ کی ان 11 لڑکیوں میں ڈینٹل اسسٹنٹ کے سرٹیفیکٹ تقسیم کئے گئے جنہوں نے مختصر سے عرصہ میں نہ صرف اسپوکن انگلش میں مہارت حاصل کی بلکہ ماہر تغذیہ امیشا تاج الدین کھیتانی سے مختلف امراض میں موزوں غذاؤں کے استعمال سے متعلق تربیت بھی حاصل کی ۔ انہیں ڈینٹل اسسٹنٹ کی تربیت فراہم کرنے والے ڈاکٹر امیت بہادر گیلانی نے بتایا کہ یہ لڑکیاں اب ماہانہ 7000 تا 8000 روپئے بآسانی کماسکتی ہیں ۔ نائب صدر انجمن محبان اہلبیت ممبئی ابراہیم ، محمد غفار ، محمد نعیم ، محمد نصیر اور مسٹرڈی محمد شفیع الدین موجود تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT