Saturday , October 21 2017
Home / ہندوستان / بچوں کے جنسی استحصال پرمجرمین کو خصی کردیا جائے

بچوں کے جنسی استحصال پرمجرمین کو خصی کردیا جائے

مرکزی حکومت کو مدراس ہائیکورٹ کی تجویز
مدورائی۔ 26 ۔ اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) مدراس ہائیکورٹ نے آج مرکزی حکومت سے کہاکہ بچوں کا جنسی استحصال کرنے والوں کو خصی کرنے کی تجویز پر غور و خوص کرے کیونکہ اس طرح کے جرائم سے نمٹنے میں مروجہ قوانین بے اثر ثابت ہورہے ہیں۔ جسٹس این کروبکران نے سخت الفاظ پر مشتمل اپنے فیصلہ میں کہا کہ بچوں کا جنسی استحصال روکنے میں مروجہ قوانین ناکام ہوگئے ہیں اور اس طرح کے جرائم بالخصوص ملک بھر میں بچوں کی اجتماعی عصمت ریزی کے واقعات پر عدلیہ خاموش تماشائی نہیں رہ سکتی۔ ہائیکورٹ جج نے ایک برطانوی شہری کی داخل کردہ عرضی کو مسترد کرتے ہوئے یہ تاثرات پیش کئے جس نے زیرین عدالت میں اس کے خلاف جنسی استحصال کے کیس کو کالعدم قرار دینے کی درخواست کی تھی۔ معزز حج کا کہنا تھا کہ خصی بنانے کی تجویز بربریت ناک ہوسکتی ہے لیکن وحشی درندوں کو عبرتناک سزا دینے کی ضرورت ہے تاکہ مجرموں کو اس طرح کے جرائم سے باز رکھا جائے ۔ انہوں نے یہ سخت ریمارک کیا کہ حقوق انسانی کی پامالی کی آڑ میں بعض کارکنان ابتداء میں متاثرین سے اظہار ہمدردی کرتے ہیں۔ بعد ازاں مجرموں کے حق میں آواز بلند کرتے ہیں۔ اس طرح وہ اپنی ہمدردی کے جذبات کا غلط استعمال کرتے ہیں، تاہم متاثرین پر بھی حقوق انسانی کا اطلاق ہوتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT