Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / بچہ مزدوری پر مکمل امتناع ضروری: دتاتریہ

بچہ مزدوری پر مکمل امتناع ضروری: دتاتریہ

پارلیمنٹ کے آئندہ سیشن میں بل کی پیشکشی، مرکزی وزیر کا بیان
حیدرآباد ۔ 25 ۔ اگست : ( سیاست نیوز) : مرکزی وزیر لیبر و روزگار ( آزادانہ چارج ) بنڈارو دتاتریہ نے کہا کہ اگرچیکہ بچہ مزدوری پر مکمل امتناع کے بل کو پارلیمنٹ میں اپوزیشن کی جانب سے کارروائی کو روکنے کے باعث اس کو لوک سبھا سیشن میں پیش نہیں کیا لیکن اسے پارلیمنٹ کے آئندہ سیشن میں ضرور پیش کیا جائے گا ۔ یہ قانون ملک میں 14 سال سے کم عمر کے بچوں کو کسی فرم یا انڈسٹری میں روزگار پر مکمل امتناع عائد کرنا ہے ۔ نیز یہ بل 14 تا 18 سال عمر والوں کو حادثاتی مقامات پر روزگار فراہم کرنے کی اجازت نہیں دے گا ۔ آج یہاں ’ ویژن فار اسمارٹ حیدرآباد ‘ پر ایک راونڈ ٹیبل سے خطاب میں جس میں حیدرآباد میں بچہ مزدوری کے مسئلہ کو بھی نمایاں کیا گیا ۔ بنڈارو دتاتریہ نے کہا کہ اس اہم بل کو کابینہ نے منظوری دے دی ہے ۔ لیکن اسے پارلیمنٹ کے مانسون سیشن میں پیش نہیں کیا جائیگا ۔ لوک سبھا میں حلقہ سکندرآباد کی نمائندگی کرنے والے مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ نے کہا کہ ان کی یہ کوشش ہے کہ حیدرآباد کو سلم سے پاک شہر بنائیں ۔ اسی طرح بچہ مزدوری اور بچپن کی شادیوں جیسے مسائل سے نمٹنے کی فوری ضرورت ہے ۔ انہوں نے تیقن دیا کہ وہ ان مسائل کو حکومت تلنگانہ اور مرکز دونوں سے رجوع کریں گے ۔

TOPPOPULARRECENT