Friday , March 31 2017
Home / کھیل کی خبریں / بگ تھری کے ساتھ باہمی سیریز کامعاہد ہ بھی ختم

بگ تھری کے ساتھ باہمی سیریز کامعاہد ہ بھی ختم

لاہور ۔7 فروری (سیاست ڈاٹ کام ) بگ تھری کیساتھ پاکستان کے 6باہمی سیریز کامعاہد ہ بھی ختم ہو چکا ہے لیکن قانونی ماہرین کی جانب سے ایم او یو کو کاغذ کا ٹکڑا قرار دینے کے باوجود کارروائی کا راگ الاپتے بورڈعہدیداروں کی سوچ پر سوالیہ نشان لگ گیا ہے۔ بگ تھری کے خاتمے کا سہرا لینے کے کئی دعویدار سامنے آ گئے ہیں تاہم یہ حقیقت ہے کہ اس میں سب سے بڑا کردارآئی سی سی چیئر مین ششانک منوہر کا ہے جنہوں نے اقتدار سنبھالتے ہی بگ تھری کو غیر منصفانہ قرار دیتے ہوئے ا س کے خاتمہ کی نوید سنا ئی تھی۔تین سال قبل ہندوستان کی جانب سے 6باہمی سیریز کھیلنے کی پیشکش قبول کرتے ہوئے اس وقت پی سی بی کے قائم مقام چیئر مین نجم سیٹھی نے بگ تھری منصوبے کے حق میں ووٹ دیا تھا ،اس فارمولے کے تحت ہندوستان کو2015 سے 2023 تک آئی سی سی کی آمدنی سے 571 ملین ڈالر ملنے تھے جبکہ انگلینڈ کے حصے میں 174 ، آسٹریلیا کے حصے میں 131 اور پاکستان کے حصے میں 94ملین ڈالر آنے تھے ۔ معاہدے کے وقت سابق چیئر مینوں نے اس بات کی نشاندہی کی تھی کہ ہندوستان اپنا کوئی وعدہ پورا نہیں کرے گا اور ایسا ہی ہوا ۔ ہندوستان  نے پاکستان کیساتھ کوئی سیریز نہ کھیلی جس پر پاکستان کو بڑے مالی نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔تمام تر کوششوں کے بعد جب کچھ ہاتھ نہ آیا تو چیئرمین پی سی بی شہریارخان اور نجم سیٹھی نے ہندوستان کیخلاف قانونی کارروائی کا اعلان کیا لیکن یہ اعلان کسی مذاق سے کم نہ تھا کیونکہ ذرائع نے کہا کہ بورڈ کے قانونی ماہرین نے پہلے ہی آگاہ کردیا تھا کہ باہمی سیریز کے ایم او یو کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے اور یہ بس ایک کاغذ کا ٹکڑا ہی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT