Sunday , August 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / بھونگیر نعیم گینگ کے مزید دو افراد گرفتار

بھونگیر نعیم گینگ کے مزید دو افراد گرفتار

تفتیش میں حیرت انگیز انکشافات، مزید گرفتاریوں کا امکان
کریم نگر۔ 18 اگست (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) گینگسٹر نعیم کے مددگار کے رمیش نرسنگو جوگوردھن چاری عرف گوپی کو پولیس نے گرفتار کرتے ہوئے ریمانڈ میں بھیج دیا ہے۔ نعیم ٹولی کا اہم مددگار سمجھا جارہا ہے۔ منتھنی کا کے رمیش کریم نگر منڈل نگنور کا متوطن نرسنگو جو گوردھن چاری عرف گوپی کو کورٹلہ میں گرفتاری کرلیا گیا۔ بعدازاں اسے جگتیال عدالت میں حوالے کیا گیا۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ نعیم کے انکاؤنٹر کے دوسرے دن ہی اسے پولیس نے حراست میں لے لیا تھا اور تفتیش کے دوران کئی ایک معاملات مجرمانہ سرگرمیوں کا علم ہوچکا ہے۔ بالخصوص کورٹلہ کی بیڑی کمپنی کے مالک محمد عبدالرؤف کو دھمکایا جاکر بھاری رقم کی وصولی میں ان دونوں ہی کا کلیدی کردار رہا ہے۔ رؤف کو نعیم کے پاس ان دونوں ہی لے گئے تھے۔ وہاں دو کروڑ کا مطالبہ کیا گیا۔ بعدازاں 60 لاکھ دینے کا معاہدہ کرواکر 30 لاکھ روپئے ان دونوں نے ہی وصول کئے تھے۔ اس کے علاوہ کورٹلہ میں ہی رقم کیلئے ایک پر قاتلانہ حملہ بھی کیا تھا۔ نگنور میں سروے نمبر 383 سے 412 سروے نمبرات کے لین دین میں ان ہی دونوں کا کردار رہا ہے۔ منتھنی کے رمیش نگنور کے گوردھن چاری ایک عرصہ سے نعیم گینگ سے مل کر کام کرنے کا پتہ چلا ہے، نہ صرف ضلع کریم نگر بلکہ دیگر اضلاع میں بھی کئی ایک تنازعات کی یکسوئی کرتے ہوئے کافی رقم اراضیات پر قبضہ کرنے کے معاملات میں ملوث ہونے کا پولیس شبہ کررہی ہے۔ ضلع سے دیگر مقامات کے دولت مندوں کی نشاندہی جبری وصولی میں ان دونوں کا نعیم نے استعمال کیا ہے۔ منتھنی منڈل سورناپلی کے متوطن کے رمیش عرف سرواپا پلی رمیش سابق نکسلائیٹ جنا شکتی میں شامل رہ کر ماؤسٹ کا ٹارگٹ بنا تھا۔

اس دوران پولیس کے آگے اپنے آپ سپرد کردیا تھا۔ بعدازاں کورڈ میں شامل ہوگیا۔ اسی لئے نعیم سے اس کے کافی عرصہ تک تعلقات تھے اور نعیم گینگ میں شامل ہوکر اس کی قیادت میں کام کرتا رہا۔ نگنور کے نرسنگو گوردھن چاری عرف گوپی کے پہلے سے سابقہ نکسلائٹس سے تعلقات تھے۔ نعیم گینگ میں شامل ہونے کے بعد گوپی کئی اراضیات کی خرید و فروخت کے کاروبار جھگڑوں میں تھے، سیٹلمنٹ کئے۔ کئی افراد کو ڈرا دھمکاکر روپیہ جبراً وصول کرلیا گیا۔ گوپی کی اہلیہ سابق میں نگنور کی سرپنچ تھی۔ فی الحال اسے بھی پولیس حراست میں لے لیا گیا ہے۔ حالیہ عرصہ میں نعیم ضلع کو چار پانچ مرتبہ آکر گیا ہے اور کئی قیمتی اراضیات قبضہ کرنے کے لئے اپنی گینگ میں شامل ماتحتوں کو ہدایت دی ہے۔ پولیس کی تحقیقات میں پتہ چلا ہے کہ زمین کسی کی بھی قبضہ کرلیں میں دیکھ لوں گا، کہتے ہوئے حکم دیا چنانچہ تین چار مقامات کی تفصیلی کاغذات نعیم کے حوالے کردیئے تھے اور ان اراضیات کو پوری طرح سے قبضہ لئے جانے کا منصوبہ تیار تھا۔ اس دوران انکاؤنٹر میں ہلاک ہوگیا اور وہ زمینات نعیم کے قبضہ میں نہ جاسکیں۔ نگنور کے سرحدی علاقہ کی زمین سے متعلقہ تین شکایتوں پر اب تک 14 افراد پر پولیس نے مقدمات درج کئے۔ مابقی اوروں کے خلاف تلاش جاری ہے۔ پولیس اس سلسلے میں بڑے پیمانے پر چھان بین کررہی ہے۔ مزید مجرمین کی گرفتاری پر اہم انکشافات ہوں گے۔ نعیم گینگ کے مزید 4 مجرمین کو حراست میں لے کر تفتیش کی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT