Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / بھگدڑ میں لاپتہ حاجی کے رشتہ دار کو ویزا

بھگدڑ میں لاپتہ حاجی کے رشتہ دار کو ویزا

ہنمکنڈہ کے شہری اپنے بھائی کا پتہ چلانے جدہ روانہ
حیدرآباد۔/9اکٹوبر، ( سیاست نیوز) وزارت خارجہ نے تلنگانہ حج کمیٹی کے اسپیشل آفیسر پروفیسر ایس اے شکور کی نمائندگی پر منیٰ بھگدڑ میں لاپتہ ایک حیدرآبادی حاجی کے رشتہ دار کیلئے ایک دن میں ویزا کی اجرائی عمل میں لائی تاکہ وہ سعودی عرب پہنچ کر اپنے لاپتہ بھائی کا پتہ چلاسکیں اور ساتھ  ہی بھگدڑ میں جاں بحق ہونے والی اپنی بھابی کی تدفین کے انتظامات کرسکیں۔ بتایا جاتا ہے کہ ہنمکنڈہ ضلع ورنگل سے تعلق رکھنے والے محمد مجیب ربانی نے اسپیشل آفیسر حج کمیٹی سے رجوع ہوتے ہوئے اس بات کی خواہش کی کہ انہیں فوری سعودی عرب روانگی کیلئے ویزا کا انتظام کیا جائے اور اس سلسلہ میں وزارت خارجہ سے سفارش کی جائے۔ انہوں نے بتایا کہ ان کے بھائی محمد معز ربانی حال مقیم ریاض جو مقامی اقامہ ہولڈر ہیں وہ اپنی اہلیہ محترمہ نکہت کوثر کے ساتھ حج کیلئے روانہ ہوئے تھے۔ منیٰ بھگدڑ واقعہ کے بعد وہ لاپتہ ہوگئے جبکہ محترمہ نکہت کوثر جاں بحق ہوگئیں جس کی توثیق سعودی حکام نے کردی۔ محمد مجیب ربانی اپنے بھائی کا پتہ چلانے جدہ روانگی کے خواہاں تھے کیونکہ کونسل جنرل انڈیا نے لاپتہ افراد کی فہرست میں ان کے بھائی کا نام شامل کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ نکہت کوثر کی تدفین ابھی تک عمل میں نہیں آئی لہذا وہ اپنی نگرانی میں انتظامات کی تکمیل کے خواہاں ہیں۔ ان کی خواہش پر پروفیسر ایس اے شکور نے وزارت خارجہ میں حج سے متعلق اڈمنسٹریٹیو آفیسر کو مکتوب روانہ کیا اور ویزا جاری کرنے کی سفارش کی۔ محمد مجیب ربانی نے ویزا اور ٹکٹ کے اخراجات برداشت کرنے کی پیشکش کی تھی، وزارت خارجہ نے اس سفارش کو قبول کرتے ہوئے ایک ہی دن میں سعودی سفارت خانہ سے ویزا کی اجرائی کو یقینی بنایا اور مجیب ربانی کل سعودی عرب کیلئے روانہ ہوگئے۔ ان کے افراد خاندان نے اس تعاون پر پروفیسر ایس اے شکور سے اظہار تشکر کیا۔

TOPPOPULARRECENT