Sunday , May 28 2017
Home / شہر کی خبریں / بھینسہ میں قبرستان کی اراضی کا ہر حال میں تحفظ کا عزم

بھینسہ میں قبرستان کی اراضی کا ہر حال میں تحفظ کا عزم

وقف بورڈ سے ہر ممکنہ اقدامات ، الحاج محمد سلیم چیرمین بورڈ کا بیان
حیدرآباد ۔ 18 ۔ مئی (سیاست نیوز) صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے کہا کہ بھینسہ میں قبرستان کی 3111 ایکر اراضی کے تحفظ کیلئے وقف بورڈ ہر ممکن اقدامات کرے گا ۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے محمد سلیم نے کہا کہ عبداللہ خاں قبرستان کے تحت موجود اس اراضی پر مقامی بلدیہ نے اپنی دعویداری پیش کی ہے۔ تاہم وقف بورڈ اپنے ریکارڈ کے مطابق اس بات پر قائم ہے کہ یہ اراضی وقف ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس مسئلہ پر کسی کے دباؤ کو قبول کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ وقف ایکٹ اور ریکارڈ کے مطابق ہی فیصلے کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ وقف بورڈ کسی بھی اوقافی جائیداد کے بارے میں ازروئے قانون کارروائی میں یقین رکھتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ این او سی کی اجرائی کے سلسلہ میں جو درخواست موصول ہوئی ہے ، اس کا 23 مئی کو وقف بورڈ کے اجلاس میں جائزہ لیا جائے گا ۔ ایک سوال کے جواب میں محمد سلیم نے اعتراف کیا کہ مقامی افراد میں بھی قبرستان کی ارا ضی کے تحفظ کے سلسلہ میں وقف بورڈ سے نمائندگی کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کی تمام اہم اوقافی جائیدادوں کی آمدنی میں اضافہ کے ذریعہ بورڈ کو مستحکم کیا جائے گا جس کے لیے وقف فنڈ اور کرایہ جات کی وصولی کے لئے وقف بورڈ کے عہدیداروں پر مشتمل ایک خصوصی ٹیم تشکیل دی ہیں جو صرف اسی کام پر مامور رہے گی۔ گریٹر حیدرآباد کے حدود کیلئے یہ کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جو جلد ہی اہم اوقافی جائیدادوں کا دعویٰ کرے گی۔ انہوں نے بتایا کہ وقف بورڈ کی آمدنی میں اضافہ کے بعد وہ بیواؤں کو وظائف دینے کا منصوبہ رکھتے ہیں ۔ اس وقت بورڈ کی آمدنی کم اور خرچ زیادہ ہے ۔ ملازمین کی کمی سے بورڈ میں فائلوں کی یکسوئی کا کام متاثر ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ چیف اگزیکیٹیو آفیسر کے تعاون کے لئے قابل عہدیدار نہیں ہے، لہذا بعض ریٹائرڈ ملازمین سے کام لیا جارہا ہے ۔ محمد سلیم نے غیر مجاز قبضوں کی روک تھام کیلئے تشکیل دی گئی ٹاسک فورس ٹیم کو آج مسجد عالمگیر خانم میٹ روانہ کیا جہاں اوقافی اراضی پر غیر مجاز تعمیرات جاری رہنے کی اطلاعات ملی ہیں۔ ایک خاتون آئی اے ایس عہدیدار کی جانب سے یہ تعمیرات کی جارہی ہیں اور وقف بورڈ کی توجہ دہانی کے باوجود کوئی کارروائی نہیں کی گئی ۔ محمد سلیم نے ٹاسک فورس ٹیم کو ہدایت کی کہ وہ غیر مجاز تعمیرات کے خلاف پولیس میں شکایت درج کریں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT