Thursday , July 27 2017
Home / اضلاع کی خبریں / بھینسہ میں ہولی تہوار کا پرامن اختتام

بھینسہ میں ہولی تہوار کا پرامن اختتام

بھینسہ۔ 14 مارچ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بھینسہ شہر میں رنگوں کے تہوار ’’ہولی‘‘ کا اکثریتی طبقہ کے افراد، معصوم بچے، نوجوان، عمر دراز، مرد و خواتین کی جانب سے اپنے اپنے محلوں میں مکانوں کے سامنے انتہائی جوش و خروش کے ساتھ اہتمام کیا گیا۔ ہولی تہوار کے پیش نظر شہر میں محکمہ پولیس کی جانب سے سخت صیانتی انتظامات کرتے ہوئے گزشتہ روز سے ہی پولیس 30 ایکٹ کا نفاذ عمل میں لایا گیا لیکن بھینسہ ڈیویژن کے مستقر تانور منڈل پر ایک واقعہ پیش آیا جس میں مستقر تانور کے 44 سالہ چنا پوشی نامی شخص کی نعش مشتبہ حالت میں مسلم افراد کے بیلوں کے رہائش گاہ کے دروازے پر لٹکی ہوئی پائی گئی جس پر بھینسہ ڈیویژن میں محکمہ پولیس متحرک کردی گئی اور شہر کے حساس مقامات و چوراہوں جن میں پنجہ شاہ سہ راہا، مارکٹ علاقہ اور بس اسٹانڈ میں پیاکٹس قائم کردیئے گئے اور پولیس جوانوں کو تعینات کردیا گیا جبکہ عبادت گاہوں کے قریب بھی پولیس کا معقول بندوبست کرتے ہوئے انتظامات کو سخت کردیئے گئے اور بھینسہ ڈی ایس پی اے راملو کی نگرانی میں ٹاؤن سرکل انسپکٹر اے رگھو، رورل سرکل انسپکٹر کے ونود کے علاوہ سب انسپکٹران عبدالنظیر، پونم چندر، اے تروپتی چندر شیکھر کے علاوہ ضلع نرمل کے دیگر مقامات سے طلب کردہ پولیس عہدیداران سرکل انسپکٹران و سب انسپکٹران صیانتی انتظامات میں تعینات دیکھے گئے اور شہر کے حساس علاقہ پنجہ شاہ سہ راہا پر سرکل انسپکٹر رورل کے ونود کی نگرانی میں سب انسپکٹر پونم چندر، اسسٹنٹ سب انسپکٹر سلیم خاں، محمد غوث اور دیگر پولیس جوان تعینات دیکھے گئے اور موٹر سائیکلوں پر سوار و آنے جانے والے افراد کی ویڈیو گرافی پولیس کی جانب سے کی گئی۔ علاوہ ازیں پنجہ شاہ سہ راہا پر وجرا گاڑی کو بھی متعین کیا گیا تھا لیکن اکثریتی طبقہ کے نوجوان رنگوں میں رنگ کر شہر کی مختلف شاہراہوں پر موٹر سائیکلوں پر گھومتے ہوئے دیکھے گئے۔ پولیس کے معقول بندوبست میں شہر میں ہولی تہوار کا پرامن طور پر اختتام عمل میں آیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT