Wednesday , August 23 2017
Home / ہندوستان / بہار آئی اے ایس آفیسر پوسٹنگ کے پہلے دن ہی گرفتار

بہار آئی اے ایس آفیسر پوسٹنگ کے پہلے دن ہی گرفتار

ٹرک ڈرائیور سے 80 ہزار روپئے رشوت لینے کا الزام
پٹنہ 14 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) بہار کے نوجوان آئی اے ایس آفیسر کو اِن کی پوسٹنگ کے پہلے ہی دن ایک ٹرک ڈرائیور سے رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کرلیا گیا۔ سب ڈیویژنل آفیسر کی حیثیت سے آئی اے ایس آفیسر کی پوسٹنگ ہوئی تھی۔ اسٹیٹ ویجلنس بیورو نے اسے رشوت لیتے ہوئے گرفتار کرلیا۔ 2013 ء بیاچ کے آفیسر ڈاکٹر جیتندر گپتا کو مغربی بہار کے ضلع کیمور میں ایس ڈی او موہینا کی حیثیت سے مقرر کیا گیا تھا۔ انھوں نے لوہے کے سلاخوں سے لدی چار لاریوں کو روک دیا جو جمشیدپور سے راجستھان جارہی تھیں۔ آفیسر کو معلوم ہوا کہ دو ٹرکوں میں ضرورت سے زیادہ مال لوڈ کیا گیا ہے، اُس نے لاریوں کو ضبط کرلیا اور انھیں چھوڑنے کے لئے اُس نے 1.5 لاکھ روپئے کی رشوت طلب کی۔ بعدازاں وہ 80 ہزار روپئے رشوت قبول کرنے تیار ہوگیا۔ لیکن ٹرک کے مالک نے اسٹیٹ ویجلنس بیورو سے شکایت کی اور اِسے رنگے ہاتھوں پکڑنے کے لئے جال بچھایا گیا۔ منگل کی رات ٹرک ڈرائیور نے جیسے ہی اِس آفیسر کو 80 ہزار روپئے دیئے ویجلنس بیورو کی ٹیم نے اُس کے مکان پر دھاوا کرکے لاریوں کے کاغذات کے ساتھ رقم کو برآمد کرلیا۔ ویجلنس بیورو آفیسر ونئے کمار نے بتایا کہ آئی اے ایس آفیسر کے علاوہ ٹرک ڈرائیور اور اُس کے گارڈ کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس کی خودکشی، چیف منسٹر کرناٹک سے استعفیٰ کا مطالبہ
منگلور 14 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) کرناٹک کی حکمراں کانگریس پارٹی کو مشکل میں ڈالنے والے واقعہ میں ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس ایم کے گنپتی کی مبینہ خودکشی پر تنازعہ کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ پارٹی کے سینئر لیڈر جناردھن پجاری نے چیف منسٹر سدارامیا سے اِس واقعہ کے تناظر میں استعفیٰ کا مطالبہ کیا ہے۔ اُن کا کہنا ہے کہ سدارامیا کی حکمرانی سے عوام ناراض ہیں۔ پجاری کا کہنا ہے کہ چیف منسٹر نے ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس گنپتی کی خودکشی کے کیس سے نمٹنے میں لاپرواہی کی ہے اور عوام اِس حکومت سے بدظن ہوچکے ہیں۔ لہذا میری رائے میں چیف منسٹر کو استعفیٰ دینا چاہئے تاکہ پارٹی کا موقف بہتر ہوسکے۔

TOPPOPULARRECENT