Tuesday , September 26 2017
Home / ہندوستان / بہار میں امن و قانون کی صورتحال ابتر ایل جے پی لیڈر چراغ پاسوان کا الزام

بہار میں امن و قانون کی صورتحال ابتر ایل جے پی لیڈر چراغ پاسوان کا الزام

بنگلور ۔ 19 ۔ جنوری : ( سیاست ڈاٹ کام ) : یہ الزام عائد کرتے ہوئے کہ بہار میں جرائم کی شرح مسلسل بڑھتے جارہی ہے ۔ لوک جن شکتی پارٹی لیڈر چراغ پاسوان نے کہا کہ چیف منسٹر نتیش کمار کو حکومت پر مکمل کنٹرول نہیں ہے اور یہ اندیشہ ہے کہ جنگل راج ، حقیقت میں قائم ہوجائے گا ۔ انہوں نے بتایا کہ بہار کی صورتحال ہر روز سنگین ہوتے جارہی ہے اور قتل و خون کے واقعات عام ہوگئے ہیں جس پر پارٹی کے اجلاس میں تبادلہ خیال کیا گیا ۔ ریاست میں صدر راج کا نفاذ یا چیف منسٹر سے استعفیٰ کا مطالبہ قبل از وقت ہوگا اور یہ توقع رکھتے ہیں کہ حالات بہت جلد بہتر ہوجائیں گے ۔ مسٹر چراغ پاسوان جو کہ ایل جے پی پارلیمانی پارٹی کے صدر نشین ہیں کہا ہے کہ نتیش کمار کوشک کا فائدہ بھی نہیں دیا جاسکتا کیوں کہ انہیں وسیع تجربہ کے ساتھ تین میعاد سے چیف منسٹر ہیں ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ قتل کی وارداتوں سے یہ ثابت ہوا ہے کہ سرکاری انتظامیہ پر نتیش کمار کا کنٹرول برقرار نہیں ہے اور بہار میں آر جے ڈی سربراہ لالو پرساد یادو بالواسطہ ، مخلوط حکومت چلا رہے ہیں ۔ مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان کے فرزند چراغ پاسوان نے یہ ادعا کیا کہ بہار کے حالات سے یہ اشارہ ملتا ہے کہ نتیش کمار کی حکومت 2 سال بھی نہیں چلے گی ۔ کیوں کہ نتیش اور لالو پرساد کے درمیان شدید اختلافات پائے جاتے ہیں ۔ اس خصوص میں انہوں نے مثال پیش کی کہ وزیر اعظم نریندر مودی کے دورہ لاہور پر نتیش کمار نے ستائش کی تو لالو یادو نے تنقید کی ۔ جس کے باعث یہ حکومت باہمی تضادات سے روبہ زوال ہوجائے گی ۔۔

TOPPOPULARRECENT