Monday , August 21 2017
Home / ہندوستان / بہار کے نتائج میرے والد کیلئے خراج : محمد سرتاج

بہار کے نتائج میرے والد کیلئے خراج : محمد سرتاج

بیساڈا (دادری) ، 9 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) پٹنہ میں جاری عاجلانہ دیوالی سے زائد از ایک ہزار کیلومیٹر کے فاصلے پر واقع یہ چھوٹا گاؤں جس نے ہوسکتا ہے بہار اسمبلی چناؤ کے نتیجے میں غیرارادی طور پر اپنا فیصلہ کن رول ادا کردیا، اُس نے انتخابی نتائج کو اپنی منظوری کا خاموش اظہار کیا ہے۔ اتوار کو جب انتخابی نتائج منظرعام پر آئے، گریٹر نوئیڈہ کے گاؤں بیساڈا کے مکین جو رائے شماری کا نتیجہ معلوم کرنے ٹی وی سٹ کے اطراف جمع تھے، انھوں نے یک آواز ہوکر کہا کہ یہ نفرت کی سیاست کے خلاف فیصلہ ہے۔ یہ گاؤں جہاں اجرت پر مزدوری کرنے والے شخص محمد اخلاق کو ستمبر میں ہجوم نے محض ایسی افواہ پر شدید زدوکوب کے ذریعے قتل کردیا کہ اُس نے گاؤ ذبیحہ کیا تھا، اس حملے کے بعد سے یہ گاؤں اضطراب کے دور سے گزر رہا ہے۔ مگر اتوار کو وہاں راحت کا احساس معلوم ہوا، ایسے جیسا کہ بی جے پی کی شکست نے اس گاؤں کو اس کے اجتماعی گناہ سے پاک کردیا ہو۔ کئی دیہاتیوں نے کہا کہ نفرت کی سیاست نے بہار میں کام نہیں کیا اور اترپردیش میں بھی نہیں کرے گی۔ اخلاق کے بڑے فرزند اور فضائیہ کے کارپورل سرتاج نے کہا کہ بہار کا نتیجہ اُن کے والد کو خراج کی مانند ہے ، اور یہ کہ عوام فرقہ پرستی کی مجتمع قوتوں کے خلاف متحد ہوگئے ہیں۔ انھوں کہا: ’’ہمارے ملک میں نفرت کی سیاست کیلئے کوئی گنجائش نہیں ۔ آج (اتوار) کا نتیجہ میرے والد کیلئے اور نفرت اور فرقہ پرستی کے خلاف خراج ہے۔ عوام کو سمجھنا چاہئے کہ مذہب کے نام پر لڑنے کا کوئی فائدہ نہیں۔ میری تمام سیاست دانوں سے اپیل ہے کہ اقتدار کی خاطر اس ملک کو تقسیم نہ کریں۔‘‘

TOPPOPULARRECENT