Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / نتیش کمار کا ڈرامائی استعفیٰ، بی جے پی کی تائید سے نئی حکومت

نتیش کمار کا ڈرامائی استعفیٰ، بی جے پی کی تائید سے نئی حکومت

آج بحیثیت چیف منسٹر حلف برداری کا امکان، بہار میں مہاگٹھ بندھن کا خاتمہ
پٹنہ ۔ 26 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) بہار کے چیف منسٹر نتیش کمار نے اپنی حلیف آر جے ڈی کے ساتھ ڈپٹی چیف منسٹر تیجسوی یادو کے خلاف عائد رشوت ستانی کے مسئلہ پر ناقابل مصالحت اختلافات کی وجہ بتاتے ہوئے آج اپنے عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ اس کے ساتھ ہی ریاست میں مہاگٹھ بندھن کا خاتمہ ہوگیا اور جنتادل (یو) کو بی جے پی کی تائید حاصل ہوگئی ہے۔ نتیش کمار نے گورنر بہار کیسری ناتھ ترپاٹھی سے رات دیر گئے ملاقات کی اور تشکیل حکومت کا دعویٰ کیا۔ نتیش کمار کے ڈرامائی استعفیٰ کے اندرون چند گھنٹے نئی صورتحال پیدا ہوئی ہے اور امکان ہیکہ وہ کل بحیثیت چیف منسٹر حلف لیں گے۔ بہار میں بی جے پی کے سینئر ترین لیڈر سشیل مودی نے بتایا کہ نتیانند اور خود انہوں نے نتیش کمار سے بات کی۔ بی جے پی نے ان کی تائید کا فیصلہ کیا ہے اور ہم گورنر کو اس سے مطلع کریں گے۔ بہار اسمبلی میں جملہ ارکان 243 ہیں جن میں نتیش کمار پارٹی کے ارکان کی تعداد 71 ہیں۔ انہیں بی جے پی کے 53 ارکان کی تائید حاصل ہورہی ہے اس طرح 124 ارکان کے ساتھ وہ تحریک اعتماد کیلئے درکار نشانہ پورا کرلیں گے۔ بی جے پی نے پہلے نتیش کمار حکومت کی باہر سے تائید کا اشارہ دیا تھا لیکن بعد میں پارٹی نے نئی حکومت میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ قبل ازیں نتیش کمار نے گورنر کیسری ناتھ ترپاٹھی کو اپنے استعفے کی پیشکشی کے بعد راج بھون کے باہر اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ’’ایسی صورتحال میں جو بہار میں پیدا ہوئی ہے۔ عظیم اتحاد حکومت چلانا دشوار ہوگیا ہے‘‘۔نتیش کمار کی جے ڈی (یو) 71 ارکان ہیں۔ تیجسوی یادو کے والد لالو پرساد یادو کی قیادت میں آر جے ڈی کے 80 اور بی جے پی کے 53 ارکان ہیں۔ نتیش نے عظیم سیکولر اتحاد کو جس میں کانگریس بھی شامل ہے، شاندار کامیابی سے ہمکنار کیا تھا۔ وہ 20 نومبر 2015ء کو حلف لئے تھے۔ اس دوران وزیراعظم نریندر مودی نے چیف منسٹر بہار کے عہدہ سے نتیش کے استعفے کا خیرمقدم کیا اور کہاکہ وہ (کمار) ایسا کرتے ہوئے رشوت ستانی کے خلاف جاری ان کی مہم میں شامل ہوگئے ہیں۔ نتیش نے جیسے ہی اپنے استعفے کا اعلان کیا، مودی نے ٹوئیٹر پر مبارکباد دی۔ انہوں نے لکھا ’’مبارکباد ! مسٹر نتیش کمار، رشوت کے خلاف مہم میں شمولیت پر‘‘۔ مودی نے سلسلہ وار ٹوئیٹس میں کہاکہ ’’ملک کے 125 کروڑ عوام ان (نتیش) کی دیانتداری کی تائید اور خیرمقدم کررہے ہیں‘‘۔ ایک اور ٹوئیٹ میں مودی نے کہاکہ ’’ملک اور بالخصوص بہار کے روشن مستقبل کیلئے یہ وقت کا تقاضہ ہیکہ سیاسی اختلافات سے بالاتر ہوجائیں اور رشوت ستانی کے خلاف جدوجہد کریں‘‘۔کانگریس نے نتیش کمار کے چیف منسٹری سے استعفیٰ پر مایوسی ظاہر کی۔ لالو یادو نے بہار کے موجودہ سیاسی بحران کیلئے بی جے پی کو موردالزام ٹھہرایا تھا۔ اخباری نمائندوں کی جانب سے مختلف سوالات کی بوچھاڑ کے درمیان برہمی کے ساتھ استفسار کیا تھا کہ ’’آیا نتیش نے تیجسوی کے استعفیٰ کیلئے کہا تھا؟…‘‘۔

TOPPOPULARRECENT