Friday , September 22 2017
Home / کھیل کی خبریں / بیرونی کھلاڑیوں کا فائنل کیلئے پاکستان آنے سے انکار

بیرونی کھلاڑیوں کا فائنل کیلئے پاکستان آنے سے انکار

دبئی ۔ یکم مارچ (سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان سوپرلیگ (پی ایس ایل) میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی نمائندگی کرنے والے انگلینڈ کے کھلاڑیوں لیوک رائٹ، کیون پیٹرسن اور ٹائمل مل نے لاہور میں ٹورنمنٹ کے فائنل میں شرکت سے انکار کردیا۔ واضح رہے کہ پی ایس ایل 2017 کے پہلے پلے آف میچ میں پشاور زلمی کو سنسنی خیز مقابلے کے بعد ایک رن سے شکست دے کر کوئٹہ گلیڈی ایٹرز لیگ کے فائنل میں پہنچ چکی ہے۔لیوک رائٹ، کیون پیٹرسن اور ٹائمل مل نے فائنل میں شرکت نہ کرنے کا اعلان سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کیا۔میچ جیتنے کے بعد لیوک نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا ابھی تک یقین نہیں آرہا کہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز جیت گئی۔انہوں نے مزید لکھا کہ بہت بوجھل دل کے ساتھ لکھ رہا ہوں کہ میں فائنل کے لئے لاہور نہیں آرہا، میری ایک فیملی ہے اور میں کرکٹ کے کھیل کے لئے خطرہ مول نہیں لے سکتا۔لیوک نے اپنی ٹیم کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کا شکریہ ادا کرتے ہوئے مزید لکھا کہ ٹورنمنٹ بہت شاندار رہا جس میں بے پناہ صلاحیت کے حامل کھلاڑیوں کو دیکھنے کا موقع ملا۔دوسری جانب کیون پیٹرسن نے بھی ٹوئٹر پر دبئی سے لندن روانگی کا پیغام دیا اور ساتھ میں لکھا کہ وہ فیملی کے ساتھ وقت گزاریں گے، جس سے صاف ظاہر ہے کہ وہ فائنل کے لئے لاہور نہیں آرہے۔ انگلینڈ کے کھلاڑی ٹائمل مل نے بھی فائنل کے لئے لاہور نہ آنے کا عندیہ دیا اور لکھا کہ وہ لاہور میں پی ایس ایل کے فائنل میں شریک نہیں ہوسکیں گے لیکن گھر پر بیٹھ کر میچ دیکھیں گے، ساتھ ہی انھوں نے اپنی ٹیم کا شکریہ بھی ادا کیا۔عہدیداروں کے مطابق انھوں نے بیرونی ملک کھلاڑیوں کو فائنل میں شرکت کے لئے راضی کرنے کی کوشش کی لیکن ملک میں گذشتہ ماہ ہونے والے دہشت گردی کے واقعات کے باعث کھلاڑی رضامند نہ ہوئے۔پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے ایک عہدیدار نے بھی تصدیق کی ہے کہ بیرونی ملک کے کمنٹیٹرز ای این بشپ اور ڈینی موریسن نے بھی فائنل کے لئے لاہور نہ آنے کا فیصلہ کیا ہے، جس کے بعد پی سی بی نے وقار یونس کو کمنٹری کے لئے مدعو کیا ہے۔ پاکستان سوپر لیگ کے نشریاتی حقوق کی حامل برطانوی کمپنی سن سیٹ اینڈ وائن لاہور میں ہونے والے ایونٹ کے فائنل کے نشریاتی حقوق سے دستبردار ہو گئی تھی، جس کے بعد دبئی کی پروڈکشن کمپنی انوویٹو پروڈکشن گروپ سے فائنل کے لئے خصوصی معاہدہ کرلیا گیا۔ یاد رہے کہ سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر ایونٹ کا فائنل لاہور میں منعقد ہوتا نظر نہیں آ رہا تھا لیکن 27 فروری کو اہم اجلاس کے بعد حکومت پنجاب نے فائنل کا انعقاد لاہور میں کرانے کا حتمی اعلان کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT