Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / بیرون ممالک میں بھی ہندوستانی کرنسی کی اہمیت ختم

بیرون ممالک میں بھی ہندوستانی کرنسی کی اہمیت ختم

بیرون ملک منتقلی پر پابندی ، سیاح ، بیرونی شہریوں اور طلبہ مسائل سے دوچار
حیدرآباد۔17نومبر(سیاست نیوز) کرنسی بند کئے جانے کے اثرات صرف ہندستانیوں پر نہیں ہوئے ہیں بلکہ ہندستان میں موجود سیاح اور بیرونی شہریوں کو بھی تکالیف کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ دونوں شہروں میں تعلیم حاصل کر رہے بیرونی ملک کے طلبہ اس مسئلہ سے دوچار اے ٹی ایم مراکز کے چکر کاٹتے دکھائی دے رہے ہیں ان طلبہ کو ہونے والے مسائل کے متعلق وہ اپنے سفارتخانوں کو مطلع کر رہے ہیں۔ شہر حیدرآباد کی مختلف یونیورسٹیوں میں تعلیم حاصل کر رہے طلبہ اس مسئلہ کے ساتھ اپنے ممالک کے سفارتی عہدیداروں سے رابطہ قائم کر رہے ہیں۔ حکومت ہند کی جانب سے بڑی کرنسی کی تنسیخ کے بعد جو مسائل سامنے آرہے ہیں ان میں بیرون ملک کے سیاح جو اپنے ممالک کے کارڈ ہندستان میں استعمال کررہے تھی انہیں قطاروں کی وجہ سے مشکلات کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے۔ اسی طرح جو بیرونی شہری مختلف وجوہات کی بناء پر ملک میں ہیں انہیں بھی اپنے پاس موجود ہندستانی کرنسی تبدیل کروانے کے لئے پریشان دیکھا جا رہا ہے۔ مرکزی حکومت نے ملک سے کرنسی بیرون ملک لیجانے پر بھی پابندی عائد کردی ہے جس کے فوری بعد دیگر ممالک میں موجود ہندستانی کرنسی کی اہمیت بھی ختم ہو چکی ہے اس طرح مختلف ممالک کے سفراء بھی وزارت خارجہ کے عہدیداروں سے رابطہ قائم کرتے ہوئے ان معاملات پر تفصیلات حاصل کرنے میں مصروف ہیں۔ نیپال اور بھوٹان دو ایسے ممالک ہیں جو ہندستانی کرنسی قبول کرتے ہیں اور اپنے ممالک میں داخل ہونے والوں کو 25000روپئے تک کی ہندستانی کرنسی لانے کی اجازت بھی دیتے ہیں لیکن 8نومبر کو ہو ئے اس اچانک اعلان کے بعد نیپال نے 1000اور500روپئے کے نوٹ پر پابندی عائد کردی ہے اور ان نوٹوں کے چلن کو بند کرنے کا اعلان کردیا ہے۔ بھوٹان میں سفارتی عہدیداروں کے بموجب 27بلین ہندستانی روپئے موجود ہیں جن کی ہندستان کو واپسی کے متعلق بھوٹان کے بینک عہدیدار حکومت ہند اور ریزرو بینک آف انڈیا میں موجود اپنے ہم منصب عہدیداروں سے رابطہ میں ہیں اور بھوٹان میں موجود اس رقم کی ہندستان کو واپسی کے متعلق امور کا جائزہ لیا جانے لگا ہے۔ حیدرآباد کے علاوہ ملک کے دیگر حصوں میں موجود بیرونی طلبہ و سیاحوں کو ہونے والی مشکلات کو دور کرنے کیلئے ریزرو بینک کی جانب سے اقدامات کئے جا رہے ہیں تاکہ انہیں کسی قسم کی مشکلات سے دوچار نہ ہونا پڑے اور ملک کے سفارتخانوں میں معاشی سرگرمیوں کی بحالی کے متعلق بھی حکومت کی جانب سے تیقنات دیئے جا رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT