Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / ’’بیف کے نام پر مسلمانوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے ‘‘

’’بیف کے نام پر مسلمانوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے ‘‘

صرف مسلمانوں کو سزاء ، کاٹجو اور شوبھاڈے کوکیوں نہیں : اعظم خان
لکھنو ۔ 20 اکٹوبر۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) گائے کا گوشت کھانے کی افواہوں پر مسلمانوں کو مار مارکر ہلاک کرنے اور ان کے چہروں پر کالک پوتے جانے کے واقعات کے پس منظر میں اترپردیش کے وزیر اور سماج وادی پارٹی کے لیڈر محمد اعظم خان نے آج کہا کہ مسلمانوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ دہلی میں کل ہندوتوا عناصر کی طرف سے جموںو کشمیر اسمبلی کے ایک آزاد رکن شیخ عبدالرشید کے چہرہ پر کالک پوتے جانے کے واقعہ کے بارے میں ایک سوال پر اعظم خان نے جواب دیا کہ ’’بیف کے نام پر مسلمانوں کو نشانہ بنایا جارہاہے ۔ہم کہاں جائیں؟ ‘‘۔ اعظم خاں نے برجستہ کہا کہ ’’اب ایک چیز ہی باقی رہ گئی ہے کہ ہندوستان کے نقشہ پر ہم مسلم لکھ دیں اور اس پر کالک پوت دیں‘‘۔ اعظم خاں نے کہا کہ گائے کا گوشت کھانا فی الواقعی اگر کوئی گناہ ہی ہے تو اس کی سزاء صرف شیخ عبدالرشید کو ہی کیوں دی جاتی ہے، مارکنڈے کاٹجو اور مصنفہ شوبھا ڈے کو ایسی سزاء کیوں نہیں دی جاتی ؟  انھوں نے کہاکہ ہندوستان کی نصف آبادی کو سزاء دی جانی چاہئے جو گائے کاگوشت کھاتی ہے ۔ اعظم خاں نے کہاکہ ’’مسلم طبقہ ایک کمزور طبقہ ہے جس کیلئے اس کو سزاء دی جارہی ہے ‘‘

TOPPOPULARRECENT