Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / بینکوں میں ’نوکیاش‘ اور قطار میں ’صبرنہیں‘

بینکوں میں ’نوکیاش‘ اور قطار میں ’صبرنہیں‘

اضلاع میں بینکس کے اندر بحث اور باہر تکرار کے واقعات
حیدرآباد ۔ 6 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ کو آر بی آئی کی جانب سے 1800 کروڑ روپئے کی نئی کرنسی روانہ کرنے کی اطلاعات کے باوجود شہر حیدرآباد کے علاوہ تلنگانہ کے کئی اضلاع میں بینکوں کے سامنے نوکیاش کے بورڈس آویزاں کردئیے گئے ہیں ۔ اضلاع میں کئی مقامات پر عوام نے بینک ملازمین سے بحث و تکرار کی ۔ اور کئی مقامات پر راستہ روکو احتجاج بھی منظم کیا ہے ۔ پہلی تاریخ کو تنخواہ ملنے کی خوشی بینکوں سے نقد رقم نہ ہونے کی وجہ سے برہمی میں تبدیل ہوگئی ہے ۔ پہلے دو دن تو بینکوں کی جانب سے معمولی رقم دی گئی ۔ اس کے بعد سے بینک ملازمین رقمی ادائیگی کے معاملے میں اپنی بے بسی کا اظہار کررہے ہیں ۔ آر بی آئی نے ہفتہ کو 1800 کروڑ روپئے کی کرنسی ریاست تلنگانہ کو روانہ کی ہے ۔ مگر عوام اس کو حاصل کرنے میں ناکام رہے ۔ اتوار کو تعطیل تھی ۔ اے ٹی ایم سنٹرس بھی کارکرد نہیں تھے ۔ پیر کو عوام صبح صبح بینکوں کو پہونچے مگر گھنٹے دو گھنٹوں میں بینکوں سے رقم ختم ہوجانے سے وہ اپنے کھاتے سے رقم نکالنے سے محروم ہوگئے ۔ سرکاری ایمپلائز تنخواہوں اور پنشنرس وظیفوں سے محروم ہیں یا چند بینکوں کی جانب سے انہیں 4 تا 6 ہزار روپئے ہاتھ میں تھماتے ہوئے اس سے کام چلا لینے کا مشورہ دیا جارہا ہے ۔ آج نوٹ بندی کے 28 ویں دن بعد عوام کو شہر حیدرآباد اور اضلاع میں طلب کے مطابق رقم نہیں ملی ہے ۔ شہر کے بینکوں میں بہت جلدی رقم ختم ہوجارہی ہے اور 90 فیصد اے ٹی ایم کام نہیں کررہے ہیں ۔ لوگ دن میں بینکوں کے سامنے اور راتوں میں اے ٹی ایم سنٹرس کے سامنے قطاروں میں کھڑے ہیں ۔ ضلع جوگولامبا گدوال کے کئی بینکوں میں نوکیاش کے بورڈ آویزاں کردئیے گئے ہیں جس سے اکاونٹ ہولڈرس نے بینک ملازمین پر اپنی ناراضگی اور برہمی کا اظہار کیا ہے ۔ عوام نے بتایا کہ وہ روز بینکوں کے چکر کاٹ رہے ہیں ۔ مگر انہیں رقم نہیں مل رہی ہے ۔ ایک مقام پر عوام نے بینک ملازمین سے بحث و تکرار کرلی ہے ۔ تھرور منڈل میں عوام نے سڑک پر احتجاج کرتے ہوئے ٹریفک کو روک دیا ہے ۔ کئی مقامات پر بینک ایمپلائز کی جانب سے کھاتہ داروں سے خشک رویہ اپنانے کی شکایتیں وصول ہورہی ہیں ۔ وظیفہ یاب بھی احتجاج کرنے کے لیے مجبور ہورہے ہیں ۔ ضلع کھمم کے نیلاکنڈہ پلی اسٹیٹ بینک آف حیدرآباد بینک میں نقد رقم نہ دینے پر برہم عوام نے بینک کے کاونٹرس کو نقصان پہونچایا ہے اور بینک ملازمین سے بحث و تکرار کی پولیس نے مداخلت کرتے ہوئے معاملے کو رفع دفع کردیا ۔ نوٹ بندی کے بعد سے بند پڑا محبوب نگر مارکٹ یارڈ کھولتے ہی پہلے دن کسانوں نے احتجاج کیا ۔ جن کی کمیونسٹ جماعتوں کے مقامی قائدین نے تائید کیا اور سڑک پر بھی راستہ روکو احتجاج کیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT