Friday , May 26 2017
Home / Top Stories / بینکوں میں کم ، اے ٹی ایمس پر طویل قطاریں

بینکوں میں کم ، اے ٹی ایمس پر طویل قطاریں

نئی دہلی، 19 نومبر (سیاست ڈاٹ کام)سینئر شہریوں کے لئے کچھ رعایات اور گاہکوں کو اپنے اکاؤنٹ والی بینک کی شاخ میں ہی نوٹ تبدیل کرنے تک محدود کر نے کے اقدام سے آج بڑی کرنسیوں کی تنسیخ کے گیارہویں دن بینکوں میں لوگوں کی بھیڑ دوسرے دنوں سے نسبتا کم نظر آئی لیکن اے ٹی ایم پر پہلے جیسا ہی برا حال رہا۔ نئے نوٹ لینے کے لئے اے ٹی ایم کے باہر ہر جگہ لوگوں کی لمبی لائن لگی رہی۔ انڈین بینک ایسوسی ایشن کی جانب سے کل رات اعلان کیا گیا تھا کہ آج ہر بینک صرف اپنے یہاں کھاتہ رکھنے والے صارفین کے نوٹ بدلے گا ۔کسی بھی بینک کی کسی بھی برانچ میں نوٹ تبدیل کرنے کی سہولت آج صرف سینئر شہریوں تک محدود رہی۔سینئر شہریوں نے آج تھوڑی راحت محسوس کی. ان کا کہنا تھا کہ دیر سے ہی صحیح حکومت کو سینئر شہریوں کا خیال تو آیا۔ اے ٹی ایم مراکز میں نقد رقم کی کمی سے لوگوں میں غصے میں نظر آئے ۔بینکوں سے بھی نقد نکالنے والوں کو زیادہ تر 2000 روپے کے نوٹ ہی دیے جا رہے تھے ۔ نوٹ بھنانے کی مشکل سے بچنے کے لئے لوگ 100 یا 500 روپے کے نوٹ کے لئے اصرار کر رہے تھے لیکن زیادہ تر بینکوں کا یہی جواب تھا کہ 500 روپے کے نوٹ ابتک پہنچے نہیں ہیں

، ایسے میں 2000 روپے کے نوٹوں سے ہی کام چلانا پڑے گا۔حکومت کی جانب سے یہ کہے جانے کے باوجود کہ 24 نومبر تک دوا کی دکانوں اور مدر ڈیری بوتھوں پر پرانے نوٹ لئے جائیں گے ، کئی جگہوں سے یہ شکایت مل رہی ہے کہ ادویات کی دکانیں اور ڈیری بوتھ والے پرانے نوٹ لینے میں آنا کانی کر رہے ہیں. وہ پرانے نوٹ لے بھی رہے ہیں تو سودا پورے 500 کا کرنے کا دباؤ ڈال رہے ہیں۔اے ٹی ایم میں نقد رقم کی کمی کا سب سے زیادہ اثر ان طالب علموں پر پڑ رہا ہے جو دوسرے شہروں سے کوچنگ کرنے کے لئے کچھ وقت کے واسطے دہلی میں رہنے آئے ہیں. ایسے زیادہ تر طالب علم اے ٹی ایم سے ہی پیسے نکالا کرتے ہیں. روپے اے ٹی ایم میں آتے بھی ہیں تو فوری طور پر ختم ہو جاتے ہیں. پتہ نہیں چلتا کہ کب آئے ، کب نکل گئے . تاہم کل شام سے کچھ پٹرول پمپ پر کارڈ swipe کر کے 2000 روپے کی منظوری کی سہولت شروع کر دی گئی ہے پر۔ ان سب اقدامات کے باوجود حالات اب تک معمول پر نہیں آئے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT