Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / بینک اور اے ٹی ایم سے رقم نکالنے کی حد میں اضافہ

بینک اور اے ٹی ایم سے رقم نکالنے کی حد میں اضافہ

۔500 روپئے کے نوٹ جاری ، ڈیبٹ / کریڈٹ کارڈس کی حوصلہ افزائی

٭ اے ٹی ایم سے رقم نکالنے کی موجودہ حد 2000 سے بڑھاکر 2500 روپئے
٭ رقمی تبادلہ کی حد 4000 سے بڑھاکر 4500 روپئے
٭ بینکوں سے رقم نکالنے کی ہفتہ وار حد 20 ہزار سے بڑھاکر 24 ہزار روپئے
٭ وظیفہ یابوں کو تصدیق نامہ حیات داخل کرنے کی تاریخ میں
۔15 جنوری 2017 ء تک توسیع
نئی دہلی ۔ /13 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) نقد رقم کی عدم دستیابی پر عوام میں پائی جانے والی برہمی اور بڑھتے غم و غصے کے دور ان حکومت نے آج رات بعض تحدیدات میں نرمی کی ہے ۔ بینک کاؤنٹرس اور اے ٹی ایم سے رقم نکالنے کی یومیہ حد میں اضافہ کیا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ بند کی جانے والی کرنسی کے ذریعہ رقمی تبادلہ کی حد بھی بڑھادی گئی ہے ۔ نقد رقم کی قلت سے نمٹنے کیلئے 500 روپئے کی نئی نوٹ بھی مارکٹ میں جاری کردی گئی ہے ۔ وزارت فینانس نے آج مختلف امور کا جائزہ لینے کے بعد فیصلہ کیا ہے کہ 500 اور 1000 روپئے کی پرانی کرنسی کے بدلے اب 2000 روپئے کی نئی کرنسی اور 500 روپئے کے نئے نوٹس حاصل کئے جاسکتے ہیں اور اس کی یومیہ حد کو 4000 روپئے سے بڑھاکر 4500 روپئے کیا گیا ہے ۔ اے ٹی ایم سے یومیہ رقم نکالنے کی حد جو 2000 روپئے تھی اسے بڑھاکر 2500 روپئے کردی گئی ۔ اسی طرح بینک کاؤنٹرس سے ہفتہ میں 20 ہزار روپئے نکالنے کی حد کو بڑھاکر 24 ہزار روپئے کیا گیا ۔ زیادہ سے زیادہ ایک دن میں 10 ہزار روپئے نکالنے کی حد ختم کردی گئی ۔ بینکوں کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ ڈیبٹ / کریڈٹ کارڈ کی اجرائی میں اضافہ کرے تاکہ صارفین اور اداروں کو ادائیگی میں سہولت ہوسکے ۔ اسی طرح وظیفہ یابان کو سالانہ صداقت نامہ حیات جو نومبر میں پیش کیا جاتا ہے ، تاریخ میں /15 جنوری 2017 ء تک توسیع کی گئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT