Thursday , October 19 2017
Home / کھیل کی خبریں / بین اسٹوکس کے نام منفی ریکارڈ

بین اسٹوکس کے نام منفی ریکارڈ

کارڈیف۔15 جون (سیاست ڈاٹ کام)پاکستان نے انگلینڈ کے خلاف چیمپیئنز ٹرافی کے پہلے سیمی فائنل میں بہترین نظم و ضبط کے ساتھ بولنگ کرتے ہوئے میزبان ٹیم کو 211 رنز پر پویلین لوٹا کر فائنل میں رسائی حاصل کرلی ہے۔اننگز کے دوران پاکستانی بولرز نے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے انگلش ٹیم کے ٹرمپ کارڈ بین اسٹوکس کو باندھے رکھا اور ایک بدترین ریکارڈ ان کے نام سے منسوب کردیا۔انگلش اننگز کے دوران بین اسٹوکس نے 34 رنز بنانے کیلئے 64 گیندوں کا سہارا لیا اور اس دوران وہ کوئی بھی باؤنڈری نہ مار سکے۔ یہ چیمپیئنز ٹرافی کی تاریخ میں پہلا موقع ہے کہ کسی کھلاڑی نے ایک اننگز کے دوران اتنی زیادہ گیندیں کھیلی ہوں اور اس نے ایک بھی گیند پر باؤنڈری نہ ماری ہو۔اس کے علاوہ پاکستانی بولروں کی عمدہ کارکردگی کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ انگلش ٹیم مکمل 50 اوورز کے دوران صرف 15 چوکے لگا سکے اور اس دوران انہوں نے ایک بھی چھکا نہیں مارا۔یہ 2015 ورلڈ کپ کے بعد پہلا موقع ہے کہ انگلش ٹیم نے اپنی مکمل اننگز کے دوران اتنے کم رنز بنائے ہوں جبکہ اس عرصے میں یہ پہلا موقع ہے کہ انہوں نے کسی اننگز میں 25 اوورز سے زائد بیٹنگ کی ہو اور ایک بھی چھکا نہ لگایا ہو۔
سرفراز کی کمزور انگریزی‘ہندوستانیوں کی حمایت
کارڈف۔15 جون (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی کپتان سرفراز احمد کی کمزور انگریزی پرہندوستانی شائقین بھی ان کی حمایت میں بول پڑے۔سرفرازاحمد نے سری لنکا کیخلاف میچ کے بعد پریس کانفرنس سے قبل انگلش صحافیوں کی موجودگی پر عدم اطمینان ظاہر کیا تاہم وہ اس بات سے لاعلم تھے کہ ٹی وی کیمرے اور مائیک کھلے ہوئے ہیں۔ یہ کلپ سوشل میڈیا پر آنے پران کی ناقص انگریزی کا بھی مذاق اڑایا گیا تاہم حیران کن طور پر ہندوستانی مداحوں نے ان کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ انگریزی پاکستانیوں کی مادری زبان نہیں اور سرفرازاحمد بطور کرکٹر کھیل سے بہتر جواب دیتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT