Saturday , June 24 2017
Home / ہندوستان / بین الاقوامی تجارتی میلہ میں ’ ہنر ہاٹ‘کا اہتمام

بین الاقوامی تجارتی میلہ میں ’ ہنر ہاٹ‘کا اہتمام

مودی کی تعمیری سوچ کی عکاسی: نقوی
نئی دہلی، 15 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) یہاں پرگتی میدان میں جاری بین الاقوامی تجارتی میلے میں آج اقلیتوں کے روایتی ہنر، فن اور دستکاری پر مبنی ”ہنرہاٹ” کا افتتاح کیا گیا۔مرکزی وزیر مملکت برائے اقلیتی امور (آزادانہ چارج) مختار عباس نقوی، مرکزی وزیر مملکت برائے قابل تجدید توانائی پیوش گوئل اور مرکزی وزیر مملکت برائے خارجہ ایم جے اکبر نے ربن کاٹ کر ہال نمبر14 میں اس ہنر ہاٹ کا افتتاح کیا، جو آئندہ 27 نومبر تک جاری رہے گا۔’ہنر ہاٹ’ کا افتتاح کرتے ہوئے مسٹر نقوی نے کہا کہ یہ ”ہنرہاٹ” اقلیتوں کے صدیوں پرانے اور روایتی ہنرکو فروغ دینے سے متعلق وزیراعظم نریندر مودی کی سوچ کی عکاسی ہے جس میں اقلیتی طبقے سے تعلق رکھنے والے لوگوں کے ذریعے تیار کئے جانے والی مصنوعات کی نمائش کی جائے گی، جس کا مقصد ان مصنوعات کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ اسے عالمی مارکیٹ بھی فراہم کرانا ہے تاکہ ان ہنرمندوں کو روزگار کے محاذ پر مزید مضبوط کیا جاسکے ۔مرکزی وزیر برائے قابل تجدیدتوانائی پیوش گوئل نے کہا کہ وزارت اقلیتی امور نے اقلیتی طبقے کے لوگوں کے روایتی ہنرکو فروغ دینے کی غرض سے پہلی بار ہنر ہاٹ کا اہتمام کیا ہے جس میں شرکت کرنے والوں کو مفت اسٹال فراہم کرایا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ انہیں حکومت کی طرف سے آمد و رفت کا کرایہ بھی دیا جارہا ہے تاکہ اس وراثت کو فروغ دیا جاسکے ۔انہوں نے وزیراقلیتی امور مختار عباس نقوی سے درخواست کی کہ وہ اس طرح کے ہنر ہاٹ کا ملک کی مختلف ریاستوں اور شہروں میں بھی اہتمام کریں۔ تاکہ نئی نسل کو ان روایتی ہنروں اور وراثت سے واقف کرایا جاسکے ۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی نمائش سے ملک کی قومی ہم آہنگی کو بھی فروغ ملے گا۔ مرکزی وزیر مملکت برائے خارجہ ایم جے اکبر نے اس موقع پر کہا کہ وزیراعظم مودی کے ”سب کا ساتھ سب کا وکاس” کے عہد کے تحت مسٹر نقوی نے آج ہنر ہاٹ کا اہتمام کرکے روایتی ہنر، فن اور دستکاروں کو نئی زندگی دی ہے جس سے غریبوں کے روزگار کے نئے مواقع فراہم کرانے کے ساتھ ہی ملک کی بھی ترقی ہوگی۔انہوں نے کہا کہ ہندوستانی دستکاری اور ہنر سے تیار کردہ مصنوعات کو پوری دنیا میں پسند کیا جاتا تھا لیکن ہندوستان پر قابض برطانوی حکومت کے ذریعہ اس ہنر کو کافی نقصان پہنچا تھا مگر مودی حکومت نے اس ہنر کو پھر سے فروغ دینے کا عہد کیا ہے جس سے ان مصنوعات کو پھر سے پوری دنیا میں ایک پلیٹ فارم ملنے کی توقع ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT