Tuesday , June 27 2017
Home / سیاسیات / بی جے پی ریاستوں میں لاقانونیت پر وزیر اعظم جواب دیں

بی جے پی ریاستوں میں لاقانونیت پر وزیر اعظم جواب دیں

مارپیٹ کے ذریعہ قتل کے واقعات تشویشناک ۔ راہول گاندھی کا بیان
نئی دہلی23مئی(سیاست ڈاٹ کام )کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے آج الزام لگایا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کے اقتدار والی ریاستوں میں افراتفری کا ماحول پیدا ہوگیا ہے اور وہاں امن و قانون بگڑ چکا ہے اس لئے وزیراعظم نریندر مودی کو اس پر جواب دینا چاہئے ۔ کانگریس کے نائب صدر نے حال ہی میں جھارکھنڈمیں تین لوگوں کو ہجوم کے ذریعہ مار پیٹ کر قتل کئے جانے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی اقتدار والی کئی ریاستوں میں امن وقانون کی حالت مسلسل خراب ہورہی ہے اور لوگ انتشار پھیلانے پر آمادہ ہیں۔ راہول نے ٹویٹ کیا کہ بی جے پی اقتدار والی ریاستوں میں راجستھان سے لے کر اترپردیش، ہریانہ اور اب جھارکھنڈ میں افراتفری کا ماحول ہے اور وہاں امن وقانون کی حالت خراب ہورہی ہے۔ کیا وزیراعظم اس کا جواب دیں گے ۔اس سلسلے میں انہوں نے اخبار میں شائع خبر کو بھی پوسٹ کیا ہے جس میں لکھا ہے کہ’’یہ تصویر جھارکھنڈ کی ہے جہاں ہاتھ پاؤں بندھا اور خون سے لت پت شخص اسے پیٹنے والے ہجوم سے زندگی کی بھیک مانگ رہا ہے ۔‘‘ قابل ذکر ہے کہ جھارکھنڈ کے جمشیدپور میں جنونی ہجوم نے دو دن پہلے بچہ چرانے کا الزام لگاکر تین افراد کو شدید زدوکوب کرتے ہوئے قتل کردیا تھا۔ کانگریس کے نائب صدر راہول نے آج الزام لگایا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت والی ریاستوں میں قانون و انتظام کی صورتحال بگڑنے کے سبب لاقانونیت کا ماحول پیدا ہوگیا ہے ، جس پر وزیراعظم نریندر مودی کو جواب دینا چاہئے۔ کانگریس کے نائب صدر نے آج یہ بھی کہاکہ بی جے پی کی حکمرانی والی کئی ریاستوں میں قانون و انتظام کی حالت مسلسل خراب ہو رہی ہے اور لوگ قانون اپنے ہاتھ میں لینے لگے ہیں۔ راجستھان کے واقعہ کے بعد اب جھارکھنڈ میں بھی ہجوم نے تین افراد کو دیوانہ وار مارپیٹ کر قتل کردیا ہے ۔ راہول نے وزیر اعظم پر لفظی حملہ کرتے ہوئے ٹویٹ کیا کہ بی جے پی کی حکمرانی والی ریاستوں ، راجستھان سے اترپردیش، ہریانہ اور اب جھارکھنڈ میں افراتفری کا ماحول ہے اور وہاں امن وقانون کی حالت خراب ہورہی ہے ۔کیا وزیراعظم اس کا جواب دیں گے ۔ انھوں نے کہا کہ میڈیا میں بھی ان گھناؤنی حرکتوں کی خبریں آرہی ہیں، سوشل میڈیا پر بھی ثبوت موجود ہے تو کیا اب حکومت خاطیوں کے خلاف ضروری کارروائی کرے گی؟

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT