Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / بی جے پی قائدین کی 6 ماہ میں ہوئی معاملتوں کی تحقیقات ہوں

بی جے پی قائدین کی 6 ماہ میں ہوئی معاملتوں کی تحقیقات ہوں

نوٹ بندی وزیر اعظم کا سیلف گول ۔ عوام کی تکالیف نظر انداز ‘ کانگریس ترجمان سنگھوی
حیدرآباد 3 دسمبر : ( سیاست نیوز ) : کل ہند کانگریس ترجمان ابھیشک سنگھوی نے کہا کہ نوٹ بندی کا فیصلہ کرکے وزیراعظم ’ سیلف گول ‘ میں پھنس چکے ہیں ۔ عوام کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوجاتا ہے تو سماجی بحران پیدا ہوجائے گا ۔ بی جے پی کی حکومت میں دہشت گردی بڑھ جانے کا دعویٰ کیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس میں انہوں نے یہ بات بتائی ۔ اس موقع پر صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی جنرل سکریٹری سید عظمت اللہ حسینی کے علاوہ دوسرے موجود تھے ۔ ابھشیک سنگھوی نے کہا کہ وزیراعظم نے اچانک 500 اور 1000 روپئے کی نوٹوں کا چلن بند کرکے عوام کو معاشی بحران سے دوچار کردیا ہے ۔ 25 دن کی تکمیل کے بعد بھی عوام بینکوں اور اے ٹی ایم کے چکر کاٹتے ہوئے پیسہ پیسہ کیلئے ترس رہے ہیں ۔ ساتھ ہی مرکزی حکومت اور آر بی آئی کی جانب سے ہر چند گھنٹوں کو ایک نیا فرمان جاری کرکے پہلے سے پریشان عوام کے صبر کا امتحان لیا جارہا ہے ۔ تمام مسائل مشکلات جانی نقصانات کے باوجود عوام مودی اور این ڈی اے حکومت پوری طرح ذمہ دار ہونگے ۔ بڑی کرنسی کی مخالفت کرنے والوں کو وزیراعظم اور بی جے پی کے قائدین ملک دشمن اور دہشت گردوں کے ہمدرد قرار دیتے ہوئے اپنے فیصلے کی مدافعت کررہے ہیں وزیراعظم یا تو پارلیمنٹ سے غائب ہیں یا پارلیمنٹ میں لب کشائی سے گریز کررہے ہیں ۔ کانگریس اور دوسری اپوزیشن نوٹ بندی کے بعد ملک کی صورتحال اور عوامی مسئلہ کو پیش کررہے ہیں ۔ پارلیمنٹ میں جواب کی بجائے وزیراعظم مختلف شہروں میں جلسے کرکے اپوزیشن کو تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں اور عوام کی انہیں تائید ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے قطاروں میں جان گنوانے والوں کو نظر انداز کررہے ہیں ۔ نوٹوں کی منسوخی سے ملک کی معیشت تباہ ہوگئی ہے ۔ شرح ترقی گھٹ گئی ہے ۔ آر بی آئی کی جانب سے ہر 5 منٹ میں قواعد تبدیل کی جارہی ہے ۔ عوام کے مسائل کو نظر انداز کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر وزیراعظم نوٹ بندی پر سنجیدہ ہیں تو پارلیمنٹ میں رائے دہی کرائیں ۔ سنگھوی نے کہا کہ 2 فیصد نظام سے 100 فیصد نقد رقمی لین دین سے پاک ملک بنانا کیسے ممکن ہے ۔ نقد رقمی دلین سے پاک سسٹم سے غیر منظم شعبہ شعبہ میں کام کرنے والے مزدوروں سے کیسے انصاف ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ 50 دن بعد مسائل حل نہیں ہوں گے بلکہ مسائل میں شدت پیدا ہوگی ۔ کانگریس اپوزیشن کا تعمیری رول ادا کرکے جمہوری انداز میں ایوان میں احتجاج کرنے کے علاوہ مختلف ریاستوں اور شہروں میں عوامی مسائل سے واقفیت حاصل کرکے مرکز سے رجوع کررہی ہے ۔ انہوں نے نوٹ بندی سے 6 ماہ قبل بی جے پی قائدین کے رقمی لین دین کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ مودی کے وزیراعظم بننے کے بعد ملک میں دہشت گردی میں اضافہ ہوا ہے ۔ پٹھان کوٹ اور برہان وانی واقعات اس کی مثال ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT