Wednesday , June 28 2017
Home / سیاسیات / بی جے پی مسلم دشمن نہیں ، کمیونٹی کیلئے مرکز کی کئی ا سکیمات

بی جے پی مسلم دشمن نہیں ، کمیونٹی کیلئے مرکز کی کئی ا سکیمات

حکومت روزگار کے مزید مواقع پیدا کرنے اور نئی صنعتیں قائم کرنے کوشاں: مرکزی وزیر نقوی
رامپور ۔ 18 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیر مختارعباس نقوی نے آج اپوزیشن پارٹیوں کی مذمت کی کہ وہ بی جے پی کو مسلم دشمن قرار دے رہے ہیں، اور اس کمیونٹی کیلئے مزید ریزرویشن فراہم  کرنے کے امکان کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اس تقاضہ کی کوئی دستوری خوبی نہیں ہے۔ مملکتی وزیر (آزادانہ چارج) برائے اقلیتی امور نے کہا کہ مسلم برادری نے اشارہ دیا ہیکہ وہ مخالف بی جے پی قوتوں کو سیاسی مفادات کیلئے انہیں گمراہ کرنے یا بیوقوف بنانے نہیں دیں گے۔ نقوی نے کہا کہ مرکزی  حکومت اس برادری کیلئے تاریخ اور ہنرمندی کی سہولیات سے متعلق پروگراموں پر کام کررہی ہے اور زیادہ سے زیادہ صنعتوں کے قیام کیلئے کوشاں ہیں تاکہ روزگار کے زیادہ مواقع پیدا کئے جاسکیں۔ انہوں نے کہا نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ پسماندہ طبقات کیلئے اسکیمات شروع کئے جارہے ہیں اور اس کا یہ مطلب نہیں کہ مسلمانوں کو ان پروگراموں سے فائدہ نہیں ہوگا کیونکہ 50 فیصد پسماندہ آبادی مسلمانوں  پر مشتمل ہے۔ مسلمانوں کو ان ترقیاتی پروگراموں کا بڑا حصہ حاصل ہوگا۔ نقوی نے مسلم برادری کیلئے ریزرویشن کا مطالبہ کرنے والے حریفوں پر سخت نکتہ چینی کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ یہ مطالبہ قانونی یا دستوری بنیاد پر مبنی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کے غلبہ والے اضلاع کیلئے حکومت نے پالی ٹیکنک کالجوں، آئی آئی ٹیز، پرائمری لیول سے لیکر ہائیر لیول تک تعلیمی اداروں کے قیام کیلئے ایک خاکہ تیار کررہی ہے۔ نیز غریب نواز اسکل ڈیولپمنٹ سنٹرس اور سدبھاونا منڈپ جیسے ادارے بھی قائم کئے جارہے ہیں۔ ان کیلئے فی کس 10 کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی اندرون و بیرون ملک دورے کرتے ہوئے ہندوستان میں بزنس اور صنعتوں کیلئے زیادہ سے زیادہ مواقع کھوج رہے ہیں۔ نقوی نے ریمارک کیا کہ ’’مودی پی ایم نہیں بلکہ فقیر ہیں‘‘۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT