Monday , October 23 2017
Home / ہندوستان / بی جے پی نے کبھی اچھے دن کا وعدہ نہیں کیا ‘ مرکز

بی جے پی نے کبھی اچھے دن کا وعدہ نہیں کیا ‘ مرکز

عوام نے اپنے نعرے بی جے پی کے منہ میں ٹھونس دئے : مرکزی وزیر نریندر سنگھ تومر
اندور 24 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) بیرونی ممالک میں رکھے گئے کالے دھن کو واپس لا کر ہر شہری کے کھاتے میں 10 تا 15 لاکھ روپئے جمع کروانے کے اعلان کو مذاق قرار دے کر عوام سے دھوکہ کرنے والی مرکزی حکومت اب اچھے دن کے وعدو ں سے بھی مکرتی نظر آ رہی ہے ۔ مرکزی وزیر فولاد و کانکنی نریندر سنگھ تومر نے ملک میں پیاز کی بڑھتی ہوئی قیمتوں پر حکومت کی مدافعت کی اور ادعا کیا کہ بی جے پی نے کبھی بھی ’’ اچھے دن آئیں گے ‘‘ کا نعرہ نہیں لگایا تھا ۔ تومر نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی نے کبھی بھی یہ نہیں کہا کہ اچھے دن آئیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ لوک سبھا انتخابات کے دوران اچھے دن آئیں گے اور راہول نانی کے گھر جائیں گے جیسے نعرے سوشیل میڈیا پر لگائے گئے تھے اور عوام نے یہ نعرے بی جے پی کے منہ میں ٹھونس دئے ۔ انہوں نے تاہم کہا کہ ہم نے اس طرح کے نعروں کے ذریعہ ظاہر کئے جانے والے عوامی احساسا ت کو قبول کرلیا تھا ۔ کانگریس پر تقنید کرتے ہوئے وزیر موصوف نے کہا کہ جو لوگ یہ کہتے ہیں کہ ملک کیلئے اچھے دن کبھی نہیں آئیں گے انہیں مشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ مثبت خیالات کی عینک لگائیں تو پھر انہیں احساس ہوگا کہ اچھے دن آ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام یہ فیصلہ کرچکے ہیں کہ کانگریس کو اچھے دن دیکھنے کا موقع نہیں ملے گا اس  لئے راہول گاندھی اور کانگریس کے جنرل سکریٹری ڈگ وجئے سنگھ کے اچھے دن نہیں آئیں گے ۔ بڑھتی ہوئی قیمتوں پر بی جے پی زیر قیادت حکومت کی مدافعت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یو پی اے حکومت میں افراط زر 10 فیصد تک پہونچ گیا تھا لیکن ہماری حکومت نے اسے پانچ فیصد تک گھٹا دیا تاہم حقیقت یہ ہے کہ پیاز کی قیمتیں بڑھی ہیں لیکن مرکزی حکومت نے اس کا نوٹ لیا ہے اور وہ بیرون ملک سے پیاز درآمد کرنے کی کوشش کر رہی ہے جس سے قیمتوں میں گراوٹ آئیگی ۔

TOPPOPULARRECENT