Tuesday , September 19 2017
Home / سیاسیات / بی جے پی کا قانون اور آئین پر یقین نہیں:کانگریس

بی جے پی کا قانون اور آئین پر یقین نہیں:کانگریس

نئی دہلی، 11 فروری (یواین آئی) کانگریس نے آج الزام لگایا کہ مودی حکومت اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) ممبئی حملوں سے متعلق ڈیوڈ کولمین ہیڈلی کے نام نہاد بیان کی بنیاد پر عشرت جہاں فرضی مڈبھیڑ کو جائزٹھہرانے کی کوشش کر رہی ہے لیکن ملک کا قانون اور آئین اس کی اجازت نہیں دیتے ۔ کانگریس کے ترجمان منیش تیواری نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ میڈیا میں آ رہی خبروں کے مطابق ہیڈلی نے مبینہ طور پر کہا ہے کہ عشرت جہاں کے لشکر طیبہ سے تعلقات تھے ۔ حکومت چاہے تو اس کی سچائی کی تحقیقات کر سکتی ہے اسے کوئی روک نہیں رہا ہے لیکن ایک بیان کی بنیاد پر جون 2004 میں احمد آباد میں ہوئی فرضی مڈبھیڑ کو جائز نہیں ٹھہرایا جا سکتا ہے ۔مسٹر تیواری نے کہا کہ نچلی عدالت نے عشرت جہاں اور ان کے ساتھیوں کے ساتھ ہوئی مڈبھیڑکو فرضی قرار دیا تھا۔ اسے ہائی کورٹ میں چیلنج کیا گیاتھا اور ہائی کورٹ کی نگرانی میں سی بی آئی نے دو سال تک اس معاملے کی تحقیقات کی تھی۔ سی بی آئی کی تحقیقات میں بھی اسے فرضی پایا گیا اور اس میں شامل پولیس افسران کے خلاف فردجرم داخل کی گئی۔
اب مودی حکومت اور بی جے پی ہیڈلی کے بیان کی بنیاد پر فرضی مڈبھیڑ کو جائز ٹھہرانے کی کوشش کر رہی ہیں لیکن ہندستان کا آئین اور قانون اس کی اجازت نہیں دیتے ۔

TOPPOPULARRECENT