Saturday , August 19 2017
Home / شہر کی خبریں / بی جے پی کو روکنے 12 فیصد تحفظات پر چیف منسٹر کی نئی حکمت عملی

بی جے پی کو روکنے 12 فیصد تحفظات پر چیف منسٹر کی نئی حکمت عملی

حیدرآباد۔3اپریل (سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ میں بھارتیہ جنتا پارٹی اور آر ایس ایس کو استحکام حاصل نہ ہو اسی لئے حکومت تلنگانہ نے مسلمانوں کے لئے 12 فیصد تحفظات کے مسئلہ کوبظاہر برفدان کی نذر کردیا ہے۔ 12فیصد مسلم تحفظات کی فراہمی کے سلسلہ میں حکومت نے کاروائی جاری رکھتے ہوئے اس بات کا جائزہ لینا شروع کردیا ہے کہ ریاست میں مسلمانوں کو حاصل تحفظات میں اضافہ کے کیا نتائج برآمد ہوں گے۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق ریاست تلنگانہ میں تیزی سے فروغ پارہی جن سنگھ اور آر ایس ایس کی سرگرمیوں میں ہونے والے اضافہ کی رپورٹس اور بھارتیہ جنتا پارٹی کو حاصل ہونے والے استحکام کو دیکھتے ہوئے حکومت نے اس مسئلہ کو کچھ مدت کے لئے بالکلیہ طور پر نظر انداز کرتے ہوئے تحفظات کی فراہمی کے سلسلہ میں درکار اقدامات جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ریاست میں تلنگانہ راشٹر سمیتی حکومت کی جانب سے مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات کی فراہمی کے وعدہ اور اس پر عمل آوری کے اقدامات پر چراغ پا آر ایس ایس اور بی جے پی مسلمانوں کو تحفظات کی شدید مخالفت کرتے ہوئے یہ تاثر دینے کی کوشش کر رہے ہیں کہ مسلمانوں کو مذہب کی بنیاد پر تحفظات کی فراہمی عمل میں لائی جا رہی ہے اور اس کا پسماندہ طبقات کو نقصان ہوگا لیکن ایسا ہر گز نہیں ہے۔ حکومت کی جانب سے اس بات کا جائزہ لیا جا رہا ہے کہ ریاست میں جاری آر ایس ایس اوربی جے پی کی بنیادی سطح پر سرگرمیو ںکوکس طرح قابو میں کیا جا سکے ۔ کیونکہ ان جماعتوں کو حاصل ہونے والے استحکام کے سبب ریاست کی پرامن فضاء خراب ہونے کے ساتھ ریاست میں فرقہ وارانہ منافرت پھیل سکتی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ آر ایس ایس اور بی جے پی مسلمانو ںکو 12فیصد تحفظات کی فراہمی کے علاوہ دیگر موضوعات اور منافرت پھیلانے والی تقاریر کی بنیاد پر اکثریتی طبقہ کو متحد کرنے کی کوشش میں مصروف ہے اور اس مقصد کیلئے مزید منافرت پھیلانے والی تقاریر کا استعمال کئے جانے کی منصوبہ بندی بھی جا رہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT