Sunday , September 24 2017
Home / سیاسیات / بی جے پی کو کارپوریٹ گھرانوں سے 705.81 کروڑ روپئے کے عطیات

بی جے پی کو کارپوریٹ گھرانوں سے 705.81 کروڑ روپئے کے عطیات

کانگریس کو 198.16 کروڑ روپئے موصول، کئی ڈونر اداروںکی تفصیلات مشتبہ
نئی دہلی۔ 18 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سیاسی جماعتوں کو موصول ہونے والے فنڈس پر نظر رکھنے والے دہلی کے ایک مفکر ادارہ نے اپنی سنسنی خیز رپورٹ میں یہ حیرت انگیز انکشاف کیا ہیکہ وزیراعظم نریندر مودی کی جماعت بی جے پی کو 2987 کارپوریٹ گھرانوں سے 705.81 کروڑ روپئے خطیر فنڈس موصول ہوئے ہیں۔ اس ضمن میں ملک کی پانچ بڑی قومی سیاسی جماعتوں کی فہرست میں بی جے پی سرفہرست ہے اور کانگریس 198.16 کروڑ روپئے کے فنڈس کے حصول کے ساتھ دوسرے مقام پر ہے۔ اسوسی ایشن فار ڈیموکریٹک ریفارمس (اے ڈی آر) نے جو سیاسی جماعتوں کی فنڈنگ پر نظر رکھی ہے اپنی رپورٹ میں کہا کہ سیاسی جماعتوں کو کارپوریٹ اداروں اور گھرانوں کی فنڈنگ کے معاملہ میں بی جے پی سرفہرست ہے جس کو 2012-13ء اور 2015-16ء کے دوران کارپوریٹ صنعتی گھرانوں سے 705.81 کروڑ روپئے حاصل ہوئے تھے۔ تفصیلات کے مطابق بی جے پی کو 2987 کارپوریٹ عطیہ دہندگان سے فنڈس موصول ہوئے تھے۔ کانگریس کو تین سال کے دوران 167 کارپوریٹ گھرانوں سے 198.16 کروڑ روپئے موصول ہوئے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق کارپوریٹ صنعتی و تجارتی گھرانوں نے اس مدت کے دوران ملک کی پانچ قومی جماعتوں کو 856.77 کروڑ روپئے (معلوم عطیوں کے 89 فیصد) عطیات دیئے تھے۔ سیاسی جماعتوں کو فنڈنگ کا سب بڑا اور اہم ذریعہ ریئل اسٹیٹ شعبہ ہے۔ اس کے علاوہ مختلف کمپنیوں کے ٹرسٹس اور گروپس بھی عطئے دیا کرتے ہیں۔ تمام سیاسی جماعتوں کو کسی مالی شکل (یکم ؍ اپریل تا 31 ؍ مارچ) 20,000 روپئے سے زائد فنڈ کی وصولی پر عطیہ دینے والوں کی تفصیلات ہر سال الیکشن کمیشن میں داخل کرنا پڑتا ہے۔ چنانچہ سیاسی جماعتیں انہیں 20,000 روپئے سے زائد فنڈس دینے والوں کا نام، پتہ، پیان کارڈ نمبر، ادائیگی کا ذریعہ اور رقم کی تفصیلات پیش کیا کرتی ہیں۔ 2012-13ء تا 2015-16ء بی جے پی اور کانگریس کو 20,000 روپئے سے زائد بالترتیب 92 فیصد اور 85 فیصد فنڈس وصول ہوئے۔ ’’کمیونسٹ جماعتوں سی پی آئی اور سی پی آئی (ایم) کا اس میں بہت ہی معمولی یعنی بالترتیب 4 فیصد اور 17 فیصد حصہ ہے اور 17 فیصد حصہ ہے۔ لوک سبھا انتخابات کے سال یعنی مالی سال 2014-15 کے دوران قومی سیاسی جماعتوں کو سب سے زیادہ فنڈس موصول ہوئے جو اس مجموعی فنڈ کا 60 فیصد حصہ ہے۔ سیاسی جماعتوں کو موصول ہونے والے فنڈس پر نظر رکھنے والے اس ادارہ کی رپورٹ نے کہا کہ ستیہ الیکٹورل ٹرسٹ تین قومی جماعتوں کو فنڈس دینے والا سب سے بڑا ادارہ رہا، جس نے (2012-13ء تا 2015-16ء) تین سال کے دوران 35 مرتبہ عطیہ دیا، جس کی مجموعی رقم 260.87 کروڑ روپئے ہے۔ اس کے منجملہ بی جے پی نے 193.62 کروڑ روپئے کی وصولی کی توثیق کی۔ کانگریس کو اس ٹرسٹ سے 57.25 کروڑ روپئے وصول تھے۔ اس مدت کے دوران این سی پی کو 10 کروڑ روپئے موصول ہوئے تھے۔ عطیہ رپورٹ میں یہ سنسنی خیز انکشاف بھی کیا گیا ہے کہ عطیات دینے والے چند اداروں سے رابطہ کی تفصیلات عدم دستیاب ہیں جبکہ آن لائن پر ان کا وجود دیکھا گیا۔

TOPPOPULARRECENT