Sunday , August 20 2017
Home / سیاسیات / بی جے پی کی دھمکی کے مقابلہ کا بائیں بازو کا اعلان

بی جے پی کی دھمکی کے مقابلہ کا بائیں بازو کا اعلان

نئی دہلی ۔ 18 اگست (سیاست ڈاٹ کام) بائیں بازو کی پارٹیوں نے آج بی جے پی کے بے نقاب کرنے کے چیلنج کو قبول کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس دھمکی کا ہر سطح پر مقابلہ کریں گے۔ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سی پی آئی ایم کے جنرل سکریٹری سیتارام یچوری اور سی پی آئی کے جنرل سکریٹری ایس سدھاکر ریڈی نے دعویٰ کیا کہ این ڈی اے بذات خود جی ایس پی جیسے مسودات قانون کی منظوری نہیں چاہتا کیونکہ اس سے اسے علاقائی حلیف پارٹیوں جیسے انا ڈی ایم کے سے محرومی کا اندیشہ ہے جو اس قانون سازی کے سخت مخالف ہیں۔ انہوں نے بی جے پی پر الزام عائد کیا کہ وہ ’’سیاسی موقع پرست‘‘ ہے۔

قائدین نے کہا کہ پارٹی نے حصول اراضی مسودہ قانون پر مشترکہ پارلیمانی کمیٹی کی رپورٹ پیش کرنے میں تاخیر کی کیونکہ اسے آئندہ بہار انتخابات میں اس کے ردعمل کا اندیشہ تھا۔ یچوری نے کہا کہ ہم فرقہ وارانہ ہم آہنگی کا تحفظ کریں گے اور جو لوگ فرقہ وارانہ صف بندی اپنے مفادات کیلئے کررہے ہیں ان کا جمہوری طریقوں سے مقابلہ کریں گے۔ جی ایس ٹی جیسے قوانین کی منظوری میں تاخیر سے ترقی کے متاثر ہونے کے دعوؤں پر یچوری نے کہا کہ ایسی مہم صرف ایک واہما ہے۔ انہوں نے کہا کہ دستوری ترمیم کے بعد اس مسودہ قانون کی منظوری کے لئے کم از کم ایک سال اور لگے گا حالانکہ بی جے پی کو لوک سبھا میں اکثریت حاصل ہے لیکن وہ جی ایس ٹی مسودہ قانون منظور نہیں کروا سکتی۔ حصول اراضی بل کے بارے میں انہوں نے کہا کہ رائے دہندوں کا وسیع حلقہ کاشتکاروں کا ہے۔ بی جے پی کو یہ بات ذہن نشین رکھنی چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT