Monday , August 21 2017
Home / سیاسیات / بی جے پی کے خلاف بائیں بازو کی پارٹیوں کے احتجاج کا منصوبہ

بی جے پی کے خلاف بائیں بازو کی پارٹیوں کے احتجاج کا منصوبہ

پارلیمنٹ کا مانسون اجلاس ضائع ہوجانے پر کانگریس کو بے نقاب کرنے بی جے پی کی ملک گیر مہم کا آغاز
نئی دہلی ۔16اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) بائیں بازو کی پارٹیوں نے آئندہ ماہ بہار میں منعقدہ انتخابات کے پیش نظر مختلف مسائل بشمول مبینہ کرپشن کے سلسلہ میں بی جے پی کو بے نقاب کرنے کیلئے ملک گیر احتجاجی مہم شروع کرنے کا منصوبہ بنایاہے ۔ سی پی آئی کے جنرل سکریٹری ایس سدھاکر ریڈی نے کہا کہ تمام بائیں بازو کی پارٹیوں کے مرکزی قائدین پٹنہ میں ایک کنونشن منعقد کریں گے ۔7ستمبر کو مقرر اس کنونشن میں بی جے پی کے کرپشن کو بے نقاب کرنے کی مہم کے لب و لہجہ کا تعین کیا جائے گا ۔ ہندی داں ریاستوں میں بی جے پی نے جو کرپشن کیا ہے اُسے بے نقاب کیا جائے گا ۔ بائیں بازو کی پارٹیوں کی یہ مہم بی جے پی کے منصوبہ کے اعلان کے بعد منظر عام پر آئی ہے جس کا مقصد اپوزیشن ارکان پارلیمنٹ کے انتخابی حلقوں میں پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کے ضائع ہوجانے کے خلاف مہم چلانا ہے ۔ برسراقتدار پارٹی نے اپوزیشن پارٹیوں پر الزام عائد کیا ہے کہ اجلاس کے دوران ناقص کارروائیوں کی ذمہ دار اپوزیشن پارٹیاں ہیں ۔ سدھاکر ریڈی نے کہا کہ ہم ایک جوابی مہم چلائیں گے

جس کے ایک حصہ کے طور پر تمام بائیں بازو کی پارٹیوں کی مرکزی قیادت کا ایک اجلاس آئندہ ماہ منعقد کیا جائے گا ۔ہم چاہتے ہیں کہ یہ مہم زیادہ تر ہندی بولنے والی ریاستوں میں چلائی جائے جہاں سے بی جے پی کے بیشتر ارکان منتخب ہوتے ہیں اور جہاں سب سے زیادہ نقصان برسراقتدار پارٹی کو بے نقاب کر کے پہنچایا جاسکتا ہے ۔ بہار کے لوک سبھا انتخابات میں اچھا مظاہرہ کرنے کے بعد بی جے پی اور اُس کی حلیف پارٹیوں نے 40میں سے 31نشستیں حاصل کرلی تھیں ۔ سیاسی اعتبار سے دوسری اہم ہندی داں ریاست یو پی میں بی جے پی نے جملہ 80نشستوں میں سے 71نشستیں حاصل کی ۔سدھاکر ریڈی نے کہا کہ بائیں بازو کے کارکن حکومت کے خلاف عوام سے ربط پیدا کریں گے ۔ ان میں کتابچہ ‘ ورقئے تقسیم کئے جائیں گے اور اس علاقہ میں عوامی اجلاس اور سمینار منعقد کئے جائیں گے ۔دریں اثناء سابق رکن پارلیمنٹ نے کہا کہ بہار انتخابات کیلئے نشستوں کی تقسیم کی بات چیت جاری ہے ۔

امکان ہے کہ ستمبر / اکٹوبر میں بائیں بازو کا اجلاس منعقد کیا جائے گا جب کہ نشستوں کی تقسیم کو آئندہ ہفتہ قطعیت دے دی جائے گی ۔اس سوال پر کہ کیا بائیں بازو این سی پی سے بھی اتحاد کا خواہاں ہے جس نے آر جے ڈی ۔جے ڈی یو اتحاد سے ترک تعلق کرلیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس کا فیصلہ ریاستی سی پی آئی شاخ سے تبادلہ خیال کے بعد کیا جائے گا ۔ سینئر بی جے پی قائد ارون جیٹلی نے جمعرات کے دن کہا تھا کہ ایک مرکزی وزیر اور چار این ڈی اے ارکان پارلیمنٹ 44کانگریسی ارکان پارلیمنٹ اور 9بائیں بازو کے ارکان پارلیمنٹ کے انتخابی حلقوں میں عام جلسے منعقد کر کے دونوں پارٹیوں کے ارکان کو بے نقاب کریں گے جن کی مخالفت کی وجہ سے پارلیمنٹ کا پورا مانسون اجلاس ضائع ہوگیا ۔ ممبئی بی جے پی نے آج ایک ماہ طویل مہم کا آغاز کردیا تاکہ عوام کو سمجھایا جائے کہ سونیا گاندھی زیر قیادت کانگریس نے کس طرح ملک کی ترقی کا راستہ پارلیمنٹ مانسون اجلاس ضائع کر کے روک دیاہے ۔

TOPPOPULARRECENT